كلبھوشن کو ہر حال میں انصاف دلانے کی کوشش کریں گے: راجناتھ سنگھ

Apr 11, 2017 12:05 PM IST | Updated on: Apr 11, 2017 02:02 PM IST

نئی دہلی۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے لوک سبھا میں آج کہا کہ ہندوستانی شہری كلبھوشن جادھو بے قصور ہیں اور پاکستان کی فوجی عدالت کا انہیں جاسوس بتا کر پھانسی دینے کا فیصلہ غلط ہے اس لئے اپنے شہریوں کو انصاف دلانے کے لئے حکومت ضروری قدم اٹھائے گی۔ لوک سبھا میں وقفہ سوالات شروع ہونے سے پہلے پورے ایوان کی طرف سے مسٹر جادھو کو پھانسی دینے کے پاکستانی فوجی عدالت کے فیصلے کی ایک سر میں سخت مذمت کئے جانے کے بعد مسٹر سنگھ نے کہا وہ اراکین کے جذبات کا احترام کرتے ہیں۔ انہوں نے اراکین کو یقین دلایا کہ اس معاملے میں جو بھی ضروری ہو گا، حکومت ہر قدم اٹھائے گی اور یقینی بنائے گی کہ مسٹر جادھو کے ساتھ انصاف ہو۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ پاکستان کی یہ کارروائی انتہائی قابل مذمت ہے اور اس سے اس کا اصلی چہرہ سامنے آ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر جادھو بے قصور ہیں۔ پاکستانی فوج نے گزشتہ سال مارچ میں ایران سے ان کا اغوا کیا تھا اور الزام لگایا کہ وہ جاسوسی کر رہے تھے۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ وہ ہندوستانی بحریہ کے سابق افسر ہیں اور اپنے کام سے ایران گئے تھے۔

وزیر داخلہ نے سوال کیا کہ مسٹر جادھو کے پاس ہندوستانی پاسپورٹ ہے تو ایسی صورت میں وہ جاسوس کیسے ہو سکتے ہیں۔ ان کے ایران کے چارواه میں وہاں کے ایک مقامی شخص کے ساتھ کاروباری تعلقات تھے اور اس سلسلے میں وہ مسلسل ایران جایا کرتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے پاکستان میں واقع اپنے ہائی کمیشن کے ذریعے ان کو وکیل فراہم کرنے کی 13 بار کوشش کی لیکن پاکستان نے اس کی اجازت نہیں دی۔ انہوں نے اسے نا انصافی  بتایا اور کہا کہ حکومت اپنے شہری کو انصاف دلانے کی ہرحال میں کوشش کرے گی۔ اس سے پہلے کانگریس کے ملک ارجن کھڑگے نے كلبھوشن جادھو کو پھانسی کی سزا کا مسئلہ پارلیمنٹ میں اٹھایا۔ لوک سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما ملک ارجن کھڑگے نے پوچھا کہ حکومت اس مسئلے پر خاموش کیوں ہے؟ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر جادھو کو پھانسی ہوتی ہے تو اسے سوچا سمجھا قتل سمجھا جائے گا۔ کھڑگے نے کہا وزیر اعظم اگر پاکستانی وزیر اعظم کی بیٹی کی شادی میں بغیر بلائے جا سکتے ہیں تو یہ مسئلہ کیوں نہیں اٹھا سکتے؟ وہیں، حکمراں فریق نے کانگریس پر جادھو معاملہ میں سیاست کرنے کا الزام لگایا ہے۔

كلبھوشن کو ہر حال میں انصاف دلانے کی کوشش کریں گے: راجناتھ سنگھ

وہیں، ایم آئی ایم کے صدر اسد الدین اویسی نے لوک سبھا میں كلبھوشن جادھو کے معاملے پر پاکستان کو کھری کھوٹی سنائی۔ اویسی نے پاکستان کی سینا عدالت کو بنانا عدالت بتایا، جہاں کسی اصول پر عمل نہیں کیا جاتا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز