رامپور میں میرٹھ سے لکھنؤ آرہی راجرانی ایکسپریس کے آٹھ ڈبے پٹری سے اترے

Apr 15, 2017 09:46 AM IST | Updated on: Apr 15, 2017 11:29 AM IST

رامپور۔  میرٹھ سے لکھنؤ آ رہی سپرفاسٹ راجراني ایکسپریس کے آٹھ ڈبے آج صبح اتر پردیش میں رامپور ضلع میں کوسی دریا کے پل کے قریب پٹری سے اتر گئے۔ حادثے میں قریب 20 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ کیشو کمار چودھری کے مطابق میرٹھ سے وایا مرادآباد ہوکر لکھنؤ جارہی 12454 راجراني ایکسپریس صبح قریب آٹھ بجکر پانچ منٹ پر مرادآباد کے مونڈاپانڈے اسٹیشن سے جیسے ہی پار ہوئی رامپور سے تقریباً پانچ کلومیٹر دور کوسی دریا کے پل کے قریب ٹرین کے انجن سے تیسری بوگی کے بعد آٹھ ڈبے پٹری سے اتر گئے۔ حادثے کی وجہ سے ٹرین میں افرا تفری مچ گئی۔ حادثے میں قریب 20 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سول لائنس علاقے میں ہوئے اس حادثے کی اطلاع کے بعد مقامی پولیس کے علاوہ ریلوے پولیس کے جوان موقع پر پہنچ گئے اور بچاؤ اور راحت کا کام شروع کر دیا۔ انہوں نے بتایا کہ زخمی مسافروں کو ایمبولینس کے ذریعے اسپتال بھیجا گیا۔ دریں اثنا، رامپور کے انچارج ضلع مجسٹریٹ ایم پی سنگھ نے سی آر پی ایف کے ڈی آئی جی سے درخواست کر کے نیم فوجی دستوں كوریلیف اور ریسکیو آپریشن کے لئے بلا لیا۔ ضلع اسپتال کے اہم میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹرآر کے ڈھل نے بتایا کہ اسپتال میں بیس مسافر علاج کے لئے آئے ہیں۔ جن میں زیادہ تر کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ تین مسافروں کو مزید چوٹ ہے۔ دوسری طرف، ریلوے نے بھی ریلیف ٹرین بھیج کر بچاؤاور امدادی کام تیز کر دیئے ہیں۔ حادثے کے بعد سے تقریباً تین گھنٹے بعد بھی دہلی، لکھنؤ اور لکھنؤ پنجاب ریلوے ٹریک متاثر رہا۔ مسافر پریشان ہیں۔

رامپور میں میرٹھ سے لکھنؤ آرہی راجرانی ایکسپریس کے آٹھ ڈبے پٹری سے اترے

شمالی ریلوے کے پی آر او نیرج شرما نے بتایا کہ پٹری سے اترے کمپارٹمنٹ کو ہٹا کر ٹریک کو آمدو رفت کےلئے دوبارہ شروع کرنے میں کچھ وقت لگ سکتا ہے۔ تب تک روٹ کی تمام ٹرینوں کو دیگر ماہرین سے پاس کرایا جا رہا ہے۔ ٹکٹوں کی واپسی کے لئے کاؤنٹر پر اضافی عملہ لگایا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز