بی جے پی کو مدعو کرنے کے کرناٹک گورنر کے فیصلہ کو سینئر وکیل رام جیٹھ ملانی نے سپریم کورٹ میں کیا چیلنج

May 17, 2018 10:34 PM IST | Updated on: May 17, 2018 10:34 PM IST

نئی دہلی : کرناٹک میں حکومت کی تشکیل کے سلسلے میں آدھی رات کوئی ہوئی سماعت کے بعد اب سینئر وکیل رام جیٹھ ملانی بی جے پی کو حکومت تشکیل کرنے کے لئے دعوت دینے کے گورنر کے فیصلے کے خلاف آج سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا۔

چیف جسٹس دیپک مشرا ‘جسٹس اے ایم کھانولکر‘ جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ کی بنچ کے سامنے معاملے کا ذکر کرتے ہوئے مسٹر جیٹھ ملانی نے کہا کہ میں ذاتی حیثیت سے گورنر کے فیصلے کو چیلنج کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک کے گورنر وجوبھائی والا نے بی جے پی کے لیڈر بی ایس یدیورپا کو وزیر اعلی کے حلف کے لئے مدعوکرکے آئینی اختیارات کا غلط استعمال کیا ہے۔

بی جے پی کو مدعو کرنے کے کرناٹک گورنر کے فیصلہ کو سینئر وکیل رام جیٹھ ملانی نے سپریم کورٹ میں کیا چیلنج

رام جیٹھ ملانی ۔ فائل فوٹو

چیف جسٹس نے مستر جیٹھ ملانی سے کہا کہ کرناٹک سے متعلق معاملہ جسٹس ارجن کمار سکری کی صدارت والی تین رکنی بنچ سن رہی ہے اور سابق وزیر قانون کو اس کے سامنے جانا چاہئے۔ جسٹس مشرا نے کہا کہ متعلقہ بنچ کل سماعت کرے گی اور مسٹر جیٹھ ملانی کو وہیں جانا چاہئے ۔اس کے بعد میں جیٹھ ملانی کمرہ عدالت سے باہر آگئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز