بابا رام رحیم کیس : کئی ریاستوں میں بھڑکا تشدد ، اب تک 28 کی موت ، 250 زخمی ، نوئیڈا و غازی آباد میں دفعہ 144 نافذ

Aug 25, 2017 04:51 PM IST | Updated on: Aug 25, 2017 08:40 PM IST

نئی دہلی : ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرو رام رحیم کو قصوروار قرار دیا گیا ہے۔ تاہم سزا کا اعلان 28 اگست کو بحث کے بعد کیا جائے گا، لیکن جیسے ہی یہ فیصلہ آیا، رام رحیم کے حامی پر تشدد ہوگئے ہیں۔ تشدد اب تک کئی ریاستوں میں پھیل گئی ہے۔ دہلی ، ہریانہ اور پنجاب سمیت متعدد مقامات پر تشدد کی خبریں ہیں ۔ دہلی میں سات مقامات پر ہنگامہ اور تشدد کی خبر ہے ۔ دہلی کے لونی ، آنند وہار ، جی ٹی بی روڈ اور جہانگیر پوری میں تشدد کا واقعہ رونما ہوا ہے۔ جہانگیر پوری میں ایک ڈی ٹی سی بس کو تو آنند وہار ریلوے اسٹیشن پر دو ڈبوں کو آگ کے حوالے کردیا گیا۔ تاہم فی الحال دہلی میں ہوئے واقعات کے ڈیرہ حامیوں کا ہاتھ ہے یا نہیں ، اس کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے ، مگر بتایا جارہا ہے کہ اس کے پیچھے بھی بابا رام رحیم کے ہی حامی ہیں ۔

تشدد میں اب تک 28  افراد کی موت ہوچکی ہے۔ ہریانہ میں جگہ جگہ تشدد بھڑک اٹھا ہے، دو ریلوے سٹیشنوں کو آگ کے حوالے کردیا گیا ہے۔ نیوز چینلوں کی دو او بی وینوں کو بھی نذر آتش کردیا گیاہے۔ دیوی لال اسٹیڈیم کے نزدیک بھی پرتشدد واقعات رونما ہورہے ہیں ، جس کی وجہ سے پولیس نے آنسو گیس کے گولے داغے ۔

بابا رام رحیم کیس : کئی ریاستوں میں بھڑکا تشدد ، اب تک 28 کی موت ، 250 زخمی ، نوئیڈا و غازی آباد میں دفعہ 144 نافذ

فیصلہ آتے ہی رام رحیم کے حامیوں نے بلوآنا اور مالاؤٹ ریلوے اسٹیشن میں آگ لگادی ۔ پولیس کا حامیوں کے ساتھ بھی ٹکراو ہورہا ہے۔ حامیوں نے جب دیوی لال ا سٹیڈیم میں تشدد شروع کیا ، تو پولیس اہلکاروں کو آنسو گیس کے گولے داغنے پڑے ۔اطلاعات کے مطابق رام رحیم کے بہت سے حامی سرسا میں آشرم کی طرف بڑھ رہے ہیں۔ سرسا کے راستے میں پولیس اور حامیوں کے درمیان جھڑپ بھی ہورہی ہے ۔ پولیس نے کئی جگہوں پر طاقت کا استعمال بھی کیاہے۔

علاوہ ازیں کئی مقامات پر میڈیا کے کارکنوں اور حامیوں کے درمیان بھی جھڑپ کی خبر ہے۔ متعدد اضلاع میںکرفیو لگادیا گیا ہے۔ خبر تک لکھے جانے تک پنچ کولہ میں ایک اور نیوز چینل کی او بی وین کو آگ کے حوالے کردیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں ایک ٹیلی فون ایکسچینج کو بھی نذر آتش کئے جانے کی خبر ہے۔

ftg-violence-panchkula_3

علاوہ ازیں ہریانہ، پنجاب اور چندی گڑھ میں آئندہ72گھنٹے کے لئے موبائل ڈاٹا او رانٹرنیٹ خدمات روک دی گئی ہیں۔ بڑی تعداد میں ٹرینوں کو منسوخ کیا گیا ہے۔ دونوں ہی ریاستوں میں بڑی تعداد میں سلامتی دستوں کو تعینات کرکے سخت جانچ کی جارہی ہے۔ پنچکولہ چھاونی میں تبدیل ہوگیا ہے۔ انتظامیہ نے امن وقانون برقرار رکھنے کے لئے شہر اور نزدیکی باجیکا، شاہ پو ر بیگو اور نیجیا کھیڑا گاوؤں میں رات دس بجے سے کرفیو نافذ کرنے کی ہدایت دی ہے اور فوج بلا لی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز