ہریانہ اور پنجاب میں فوج کی 28 ٹکڑیاں تعینات ، گرمیت رام رحیم کی سزا کا عدالت کل کرے گی اعلان

حالات پر قابو پانے کیلئے فوج کی 4 مزید ٹکڑیاں تعینات کی گئی ہیں۔ فوج کی 24 ٹکڑیاں پہلے سے ہی تعینات تھیں۔

Aug 27, 2017 06:19 PM IST | Updated on: Aug 27, 2017 06:20 PM IST

نئی دہلی: عصمت دری کے قصوروار پائے گئے ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم کی گرفتاری کے بعد ان کے حامیوں کی جانب سے تشدد کے پیش نظر ہریانہ اور پنجاب میں ڈیرہ کے اثر والے علاقوں میں حالات پر قابو پانے کیلئے فوج کی 4 مزید ٹکڑیاں تعینات کی گئی ہیں۔ فوج کی 24 ٹکڑیاں پہلے سے ہی تعینات تھیں۔

فوج کے مطابق ہریانہ کے پنچکولہ اور سرسا میں اس کی 12۔12 اور پنجاب کے مانسا اور مکتسر میں دو۔دو ٹکڑیاں تعینات کی گئی ہیں۔ ابھی تک فوج نے ڈیرہ ہیڈکوارٹر میں کسی طرح کی کارروائی نہیں کی ہے۔ واضح رہے کہ خصوصی سی بی آئی عدالت نے گرمیت رام رحیم کو جمعہ کو سادھوی عصمت دری معاملے میں قصوروار قرار دیتےہوئے کہا تھاکہ ان کی سزا پر 28 اگست کو فیصلہ سنایا جائے گا۔

ہریانہ اور پنجاب میں فوج کی 28 ٹکڑیاں تعینات ، گرمیت رام رحیم کی سزا کا عدالت کل کرے گی اعلان

رام رحیم کو روہتک کی سناریا جیل میں بند کیا گیا ہے۔ فیصلہ آنے کے بعد رام رحیم کے حامیوں نے پنچکولہ اور سرسا میں خصوصی طور پر سڑکوں پر جم کر توڑ پھوڑ کی اور تشدد اور آتشزنی کی۔ اس دوران 35 افراد سے زائد ہلاک اور 100 دیگر زخمی ہوگئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز