لکھنو : امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کی جانب سے غریبوں میں رمضان کٹ کی تقسیم ، ذمہ داران نے کیا یہ مطالبہ

Jun 07, 2017 10:26 PM IST | Updated on: Jun 07, 2017 10:26 PM IST

لکھنو : لکھنؤ کے امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ نے وزیر اعظم مودی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے غیرملکی دورے کو کم کرکے ان غریبوں کی طرف متوجہ ہوں ، جن کو دو وقت کی روٹی بھی نہیں مل پا رہی ہے۔ ٹرسٹ کے ذمہ داران کا کہنا ہےکہ عوام افلاس کی گرفت میں ہیں اور سیاسی رہبر زمینی مسائل کو نظرانداز کر کے فضاؤں میں گھوم رہے ہیں ۔ امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کی جانب سے غریبوں میں رمضان کٹ کی تقسیم کی جا رہی ہے ۔

رمضان رحمتوں نعمتوں اور برکتوں کا مہینہ ہے اور اگر اس ماہ مقدس میں بھی لوگوں کو رزق کے لالے پڑجائیں ، تو بہت کچھ سوچنے اور کرنے کا مقام ہے۔ خیرات و زکوٰۃ کا معقول نظم نہ ہونے کے سبب مسلم معاشرے کی غریبی دور نہیں ہو پا رہی ہے۔ بیرونی ممالک سے لوگ پیسہ تو لاتے ہیں ، لیکن وہ حقداروں تک نہیں پہنچاتے۔ ٹرسٹ کے بانی مولانا علی حسین قمی یہ بھی کہتے ہیں کہ ملت کے رہبر تو راہ سے بھٹک ہی گئے ہیں ، ساتھ ہی ملک کے بڑے لیڈران بھی غریبوں کی طرف نہیں دیکھ رہے ہیں ۔

لکھنو : امامیہ ایجوکیشنل ٹرسٹ کی جانب سے غریبوں میں رمضان کٹ کی تقسیم ، ذمہ داران نے کیا یہ مطالبہ

ایک اہم پہلو یہ ہے بھی ہے کہ صرف حکومتوں کی طرف دیکھتے رہنے سے مسائل کا حل ممکن نہیں ہے ۔ اہم سوال یہ بھی ہے کہ جس قوم میں خیرات زکوٰۃ خمس صدقے اور فطرے کی ادائیگی کے لئے سخت احکامات ہیں ، وہ کاسہ گدائی لیے کیوں گھوم رہی ہے ۔ سچ یہی ہے کہ حق داروں تک ان کے واجب حق نہ پہنچاکر لوگ اپنی دوزخ اور اپنی تجوریاں بھر رہے ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز