اترپردیش : عصمت دری کی شکایت لے کر آئی خاتون کو ہی ایس ایس پی نے بھیجا جیل

May 24, 2017 11:42 PM IST | Updated on: May 24, 2017 11:42 PM IST

بلند شہر : بھلے ہی وزیراعظم سے لے کر وزیر اعلی یوگی تک پولیس افسران کو خواتین سے نرمی سے پیش آنے کے ساتھ ساتھ ان کی پریشانی کو سنجیدگی سے حل کرنے کی ہدایت دے رہے ہوں ، لیکن افسران کے دماغ آج بھی انگریزوں کے زمانے کے افسران جیسے ہی ہیں۔ وہ قانون کو بر طرف رکھ اپنے مزاج کے مطابق ہی اپنی حکومت چلاتے ہیں اور حکم دیتے ہیں ۔ ایک ایسا ہی معاملہ بلند شہر میں اس وقت دیکھنے کو ملا ، جب وہاں کے ایس ایس پی نے عصمت دری کی شکایت لے کر آئی ایک خاتون کو اس کی چیخ پکار پر جیل بھیجنے کا حکم دے ڈالا ۔

خیال رہے کہ بلند شہر پولیس اپنے كارناموں کو لے کر اکثر سرخیوں میں رہتی ہے۔ تاہم تازہ معالہ ضلع پولیس کپتان کا ہے ، جنہوں نے ایک ریپ متاثرہ کو ہی جیل کی ہوا کھلانے کا حکم دے ڈالا۔ متاثرہ کا قصور صرف اتنا تھا کہ وہ کئی ماہ سے انصاف کے لئے پولیس دفتروں کے چکر لگا رہی تھی۔ آج بھی متاثرہ ایس ایس پی آفس پر ملزم کی گرفتاری کا مطالبہ کرنے پہنچی تھی اور ملک کے وزیر اعظم مودی اور ریاست کے وزیر اعلی آدتیہ ناتھ یوگی کے زندہ آباد کے نعرے لگا کر اپنے لئے انصاف کا مطالبہ کر رہی تھی ۔

اترپردیش : عصمت دری کی شکایت لے کر آئی خاتون کو ہی ایس ایس پی نے بھیجا جیل

مگر یہ بات کپتان صاحب کو اتنی ناگوار گزری کہ انہوں نے متاثرہ کو جیل بھجوا دیا ۔ متاثرہ کا الزام ہے کہ کئی ماہ پہلے ایک شخص نے دھوکے سے نشہ آور اشیا کھلا کر اس کی آبروریزی کی تھی اور ویڈیو کلپس بنائی تھی ۔ اس کے بعد ملزم متاثرہ کو مسلسل بلیک میل کرتا رہا اور اب تک وہ قریب 185000 روپے لے چکا ہے ۔ متاثرہ نے پولیس پر الزام عائد کیا اور کہا کہ پولیس ملزم سے پیسے لے کر بک ہوچکی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز