اب مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے کہا : سپریم کورٹ سے رام مندر کی تعمیر کے حق میں فیصلہ آنے کی امید

Feb 16, 2017 08:06 PM IST | Updated on: Feb 16, 2017 08:06 PM IST

لکھنؤ: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے کہا کہ انہیں پوری امید ہے کہ سپریم کورٹ سے اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے حق میں فیصلہ آئے گا۔ مسٹر پرساد نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ خصوصی فل بینچ میں وہ 'رام للا کی جانب سے وکیل تھے۔انہیں ثبوتوں کے بارے میں مکمل علم ہے۔ہائی کورٹ کا فیصلہ 'رام للا کے حق میں آیا تھا، اس لئے انہیں پوری امید ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی مندر کی تعمیر کے حق میں آئے گا۔

کانگریس اور سماج وادی پارٹی (ایس پی) اتحاد پر طنز کرتے ہوئے بی جے پی لیڈر نے کہا کہ جو کانگریس کے لیڈراور سابق وزیر اعظم آنجہانی پی وی نرسمہا راؤ کی نہیں ہوئی وہ اکھلیش یادو کی کیا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر راؤ کی موت کے وقت منموہن سنگھ وزیر اعظم تھے، ان کی آخری رسومات دہلی میں نہیں ہونے دی گئیں۔ یہی نہیں، واضح طورپر کہا گیا تھا کہ جسد خاکی کو حیدرآباد لے جایا جائے۔ کانگریس صرف ایک کنبہ کا ساتھ دیتی ہے۔ کچھ دن بعد اکھلیش یادو کو 'یوپی کو یہ ساتھ پسند ہے کا اصلی مطلب سمجھ میں آ جائے گا۔

اب مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے کہا : سپریم کورٹ سے رام مندر کی تعمیر کے حق میں فیصلہ آنے کی امید

انہوں نے کہا کہ اتر پردیش میں بی جے پی مکمل اکثریت سے حکومت بنائے گی۔ ترقی کو رفتار دی جائے گی اور مجرموں کو جیل بھیجا جائے گا۔ تفتیش کے بعد بدعنوانوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز