آر بی آئی نے سود کی شرح میں نہیں کی تخفیف، روپے نکالنے کی پوری پابندی 13 مارچ سے ہو گی ختم

Feb 08, 2017 03:52 PM IST | Updated on: Feb 08, 2017 03:52 PM IST

نئی دہلی۔ آر بی آئی نے نئی مانیٹری پالیسی جاری کر دی ہے۔ ملک کے سب سے بڑے بینک کی جانب سے نئی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے گورنر ارجت پٹیل نے پالیسی کی شرح میں کوئی تبدیلی نہیں کی ہے۔ بیس فروری سے بچت اکاؤنٹ سے روپے نکالنے کی حد 50 ہزار ہو جائے گی جبکہ 13 مارچ کے بعد یہ پوری پابندی ختم ہو جائے گی۔

اس طرح، ریپو ریٹ 6.25 فیصد پر ہی برقرار ہے۔ وہیں ریورس ریپو ریٹ بھی 5.75 فیصد پر برقرار ہے۔ ریورس ریپو پر ہی بینک اپنا پیسہ آر بی آئی کے پاس رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ ایم ایس ایف، بینک ریٹ 6.75 فیصدی پر برقرار رکھا گیا ہے۔ ریزرو بینک نے ایک بار پھر مارکیٹ کو مایوس کیا ہے۔ امید کے برعکس آر بی آئی نے شرح سود میں کوئی کمی نہیں کی ہے۔ اس کے علاوہ آر بی آئی نے پالیسی رخ اكموڈیٹیو سے کم کرکے نیوٹرل کر دیا ہے جس کا مطلب یہ ہوا کہ اگلی پالیسی میں بھی شرح میں کمی نہیں ہوگی۔

آر بی آئی نے سود کی شرح میں نہیں کی تخفیف، روپے نکالنے کی پوری پابندی 13 مارچ سے ہو گی ختم

ریزرو بینک نے ریپو ریٹ کو 6.25 فیصد پر برقرار رکھا ہے۔ وہیں ریورس ریپو 5.75 فیصد اور سی آر آر 4 فیصد پر مستحکم رکھی گئی ہے۔ آر بی آئی نے مالی سال 2017 کے لئے ترقی کا تخمینہ 7.1 فیصد سے کم کرکے 6.9 فیصد کر دیا ہے۔ آر بی آئی کے مطابق مالی سال 2018 میں جی ڈی پی ترقی تیزی سے سدھرنے کا اندازہ ہے۔ اس کے علاوہ آر بی آئی کے مطابق جنوری سے مارچ تک مہنگائی کی شرح 5 فیصد سے کم رہنے کا اندازہ ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز