Live Results Assembly Elections 2018

ججوں کی پریس کانفرنس پر کانگریس کا اظہار تشویش ، سوامی نے ججوں کو بتایا ایماندار ، پڑھیں کس نے کیا کہا ؟

ہندوستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سپریم کورٹ کے چار ججوں نے پریس کانفرنس کی ۔ یہ پریس کانفرنس جسٹس جے چلامیشور کے گھر پر منعقد کی گئی تھی ۔ ان کے ساتھ دیگر تین جج جسٹس رنجن گوگوئی ، جسٹس مدن بی لوکر اور جسٹس کورین جوزیف موجود تھے ۔

Jan 12, 2018 04:48 PM IST | Updated on: Jan 12, 2018 04:48 PM IST

نئی دہلی: ہندوستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سپریم کورٹ کے چار ججوں نے پریس کانفرنس کی ۔ یہ پریس کانفرنس جسٹس جے چلامیشور کے گھر پر منعقد کی گئی تھی ۔ ان کے ساتھ دیگر تین جج جسٹس رنجن گوگوئی ، جسٹس مدن بی لوکر اور جسٹس کورین جوزیف موجود تھے ۔ اچانک منعقد کی گئی پریس کانفرنس سے حکومت سمیت پورا ملک حیران ہے ۔ جہاں سیاسی لیڈران اس معاملہ پر اپنا الگ الگ رد عمل ظاہر کررہے ہیں وہیں ملک کے معروف قانونی ماہرین اور وکیلوں نے بھی اپنے رد عمل کا اظہار کیا ہے۔

پریس کانفرنس کے دوران جسٹس جے چلامیشور نے کہا کہ سپریم کورٹ میں جو ہوا ، وہ صحیح نہیں تھا ، ہم نے چیف جسٹس کو سمجھانے کی پوری کوشش کی ، لیکن ہم کامیاب نہیں ہوسکے ۔ ہم چاروں ججوں کا ماننا ہے کہ جمہوریت کی بقا کیلئے شفافیت ضروری ہے۔

ججوں کی پریس کانفرنس پر کانگریس کا اظہار تشویش ، سوامی نے ججوں کو بتایا ایماندار ، پڑھیں کس نے کیا کہا ؟

یہ جمہورت کیلئے خطرناک: کانگریس

کانگریس نے اپنے آفیشل ٹوئٹر پر ملک کی عدالت عظمی کے ججوں کے ذریعہ عدالت کے کام کاج پر پہلی مرتبہ پریس کانفرنس کرنے پر تشویش کااظہار کیا ہے اور کہا ہے یہ جمہورت کیلئے خطرناک ہے ۔ پارٹی نے کہا کہ سپریم کورٹ کے طریقہ کار پر عدالت کے چار ججوں کی پریس کانفرنس تشویش کا موجب ہے۔

Loading...

چاروں ججوں اور چیف جسٹس کے اتحاد کو وزیر اعظم یقینی بنائیں : سبرامنیم سوامی

بی جے پوی کے سینئر لیڈر سبرامنیم سوامی نے کہا کہ ہم پریس کانفرنس کرنے والے ججوں کی نکتہ چینی نہیں کرسکتے۔ چاروں ججوں کا اپنے اپنے شعبہ میں کافی اہم رول رہا ہے ۔ ہمیں ہر حال میں ان کا احترام کرنا چاہئے۔اب وزیر اعظم کو یہ یقینی بناناچاہئے کہ چاروں ججوں اور چیف جسٹس ایک خیال کے ساتھ اور متحد ہوکر کام کریں۔

کچھ سنگین معاملہ تو ضرور ہوگا: ریٹائرڈ جج مکل مدگل

سپریم کورٹ کے ریٹائرڈ جج مکل مدگل نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ججوں کے سامنے پریس کانفرنس کرنے کے سوا کوئی راستہ نہیں تھا تو کچھ سنگین معاملہ ضرور رہا ہوگا۔ لیکن جسٹس لویا کے معاملے سے اس کا کیا تعلق ہوسکتا ہے ۔ میں اس کے بارے میں کچھ نہیں جانتااور نہ ہی کسی سیاسی موضوع پر کوئی تبصرہ کرنا چاہتا ہوں۔

ججوں کی پریس کانفرنس سے مایوس ہوں: سولی سوراب جی

سابق سالسٹر جنرل سولی سوراب جی نے کہا کہ ججوں کی پریس کانفرنس سے مایوس ہوں۔ سپریم کورٹ میں تقسیم کی صورت نہیں ہونی چاہئے۔

ججوں کے اس قدم سے عدلیہ میں تبدیلی آئے گی: ٹی ایس تلسی

سپریم کورٹ کے سینئر وکیل کے ٹی ایس تلسی نے کہا کہ ججوں کے اس قدم سے عدلیہ میں تبدیلی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کا معاملہ لوگوں کے اعتماد سے وابستہ ہے اور جو کچھ ہوا ہے وہ افسوس ناک ہے۔

ججوں کے اس قدم کا خیر مقدم : اندارا جے سنگھ

سینئر وکیل اندارا جے سنگھ نے ججوں کے اس قدم کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے عوام کو یہ جاننے کا حق ہے کہ سپریم کورٹ میں کیا چل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ملک کی سب سے بڑی عدالت کے اندر جو کچھ ہورہا ہے وہ سب کے سامنے آگیا ہے۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز