بہار سیلاب متاثرین کے لئے دلی کے جامعہ نگر سے بھیجی گئیں راحتی اشیا

Sep 16, 2017 05:00 PM IST | Updated on: Sep 16, 2017 05:00 PM IST

نئی دہلی ۔ بہار کے سیلاب متاثرین کے لئے پورے ملک سے امدادی سامان اور اشیائے ضروریہ بھیجی جا رہی ہیں۔ وہیں،  دہلی کے جامعہ نگر سے بھی راحتی سامان بھیجے گئے۔ امن نامی این جی او اور جامعہ ملیہ اسلامیہ میں پڑھنے والے بہار کے طلباء نے اس امدادی سامان کو جمع کیا تھا؛ سیمانچل کے علاقے میں بھیجے گئے سامان میں 500 افراد کے لئے نئے کمبل اور کٹس بھیجے گئے ہیں۔ امن  کے لوگوں نے ہری جھنڈی دکھا کر امدادی سامان روانہ کیا۔ اس موقع پر این جی او کے صدر كليم الحفیظ نے  بہار کو دئیے گئے  سیلاب پیکیج کو ناکافی بتایا اور کہا کہ حکومت کو بہار کے لئے مزید فنڈ دینا چاہئے۔

بہار سیلاب متاثرین کے لئے دلی کے جامعہ نگر سے بھیجی گئیں راحتی اشیا

انہوں نے کہا یہ امدادی سامان امن جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباء اور النواز ریسٹورنٹ  کی طرف سے جمع کیا گیا ہے اور لوگوں سے جو فنڈ اور مدد ملی اس سے موسم سرما کو دیکھتے ہوئے  500 لوگوں کے لئے کمبل  بھی ہم بھیج رہے ہیں جبکہ پرانا کپڑا اور سامان بھی جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا سیمانچل کے علاقے میں اس طرح کی اطلاع آ رہی ہیں کہ وہاں پر حکومت کی طرف امدادی سامان ٹھیک سے نہیں پہنچ رہاہے  انہوں نے کہا مرکزی کی طرف سے دیا گیا 550 کروڑ روپے کا راحت پیکیج بہت کم ہے کیونکہ جو نقصان ہوا ہے وہ بہت بڑا ہے۔ سینکڑوں لوگوں کی جانیں چلی گئیں اور جو زندہ بچے ہیں ان کے گھر بار گاؤں بستی تمام برباد ہو چکے ہیں ایسے میں مرکز کی طرف سے دی گئی ریلیف اونٹ کے منہ میں زیرہ کے برابر ہے۔

امن کے خزانچی خالد حسن نے کہا کہہم نے اپنی طرف سے کوشش کی ہے یہ سامان بہت ہی کم ہے لیکن ہم کوشش کر رہے ہیں اور آگے بھی لوگوں کی مدد کے لئے کام کرتے رہیں گے انہوں نے کہا کہ لوگوں کو اور دوسری ریاستی حکومتوں کو بھی بہار سیلاب متاثرین کی مدد کے لئے آگے آنا چاہئے۔ قابل ذکر ہے کہ مرکزی حکومت نے بہار سیلاب متاثرہ علاقوں کے لئے 550 کروڑ روپے  کا امدادی فنڈ فراہم کرایا ہے۔  متاثرہ علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے یہ اعلان وزیراعظم مودی کی طرف سے کیا گیا تھا۔

ری کمنڈیڈ اسٹوریز