دس روپئے کا نہیں ہے نقلی سکہ، جانیں کتنے طرح کے سکے چل رہے مارکیٹ میں

Apr 10, 2017 09:36 AM IST | Updated on: Apr 10, 2017 09:36 AM IST

نئی دہلی۔ ملک میں دس روپئے کی مختلف اقسام کے سکوں پر عوام کے درمیان الجھن کو ختم کرنے کے لئے ریزرو بینک نے نوٹس لیا ہے۔ اتوار کو بینک نے کہا ہے کہ کوئی بھی 10 کا سکہ غلط نہیں ہے اور تمام سکے چلن میں ہیں۔ ملک کے کئی حصوں میں دس روپے کے جعلی سکوں کی افواہوں کی وجہ سے عوام کو دقت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ بینک کا کہنا ہے کہ شیراوالی کی تصویر والا سکہ، پارلیمنٹ کی تصویر والا سکہ، درمیان میں تعداد میں '10' لکھا ہوا سکہ، ہومی بھابھا کی تصویر والا سکہ، مہاتما گاندھی کی تصویر والا سکہ سمیت دیگر تمام سکے درست ہیں۔

کارپوریٹ امور کے وکیل شجاع ضمیر کا اس معاملے پر کہنا ہے کہ ہندوستان کی جائز کرنسی کو لینے سے انکار کرنے پر غداری کا معاملہ بنتا ہے۔ تعزیرات ہند کی دفعہ 124 (1) کے تحت یہ جرم ہے۔ آر بی آئی نے کہا کہ مرکزی بینک نے وقت پر اقتصادی، سماجی اور ثقافتی موضوعات پر سکے جاری کئے ہیں اور سکوں میں 2011 میں روپے کا آئکن کرنے کے بعد تبدیلی آئی۔

دس روپئے کا نہیں ہے نقلی سکہ، جانیں کتنے طرح کے سکے چل رہے مارکیٹ میں

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز