روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس بھیجنے کی کارروائی قانون کے مطابق: کرن رجیجو

Sep 05, 2017 07:33 PM IST | Updated on: Sep 05, 2017 07:33 PM IST

نئی دہلی۔ وزیراعظم نریندر مودی کے میانمار دورہ کے درمیان داخلہ کے مرکزی وزیر مملکت کرن رجیجو نے آج کہا کہ مرکزی حکومت کی روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس ان کے ملک بھیجنے کی کارروائی قانون کے مطابق ہوگی۔ مسٹر رجیجو نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں ایک سوال کے جواب میں کہا کہ روہنگیا لوگ غیرقانونی طریقہ سے ہندستان میں رہ رہے ہیں۔ حکومت انہیں میانمار بھیجنے کی کارروائی کررہی ہے۔ یہ کارروائی مکمل طورپر قانون کے مطابق ہے۔

روہنگیا مسلمانوں پر حکومت کی کارروائی کی کچھ بین الاقوامی انسانی حقوق تنظیموں کے مذمت کرنے کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ ہندستان میں یہ غیرقانونی تارکین وطن ہیں۔ خواہ وہ اقوام متحدہ میں رجسٹرڈ ہوں یا نہیں ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی ادارے پناہ گزینوں کے معاملہ پر ہندوستان کو درس دینے کی کوشش نہ کریں۔ ہندستان جمہوری ملک ہے اور ہندستان نے سب سے زیادہ پناہ گزینوں کو پناہ دی ہے۔ حکومت ہند انہیں سمندر میں نہیں پھینک رہی ہے اور نہ ہی گولی ماررہی ہے۔ انہیں واپس بھیجنے کا کام قانون کے مطابق کیا جا رہا ہے۔

روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس بھیجنے کی کارروائی قانون کے مطابق: کرن رجیجو

داخلہ کے مرکزی وزیرمملکت کرن رجیجو: فائل فوٹو۔

حکومت نے ملک میں غیرقانونی طریقہ سے موجود 40ہزار سے زائد روہنگیا لوگوں کو واپس ان کے ملک میانمار بھیجنے کا عمل شروع کیا ہے۔ مسٹر مودی کے آج سے شروع ہوئے میانمار دورہ کے دوران اس معاملے پر بات چیت ہونے کی امید ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز