سائرہ بانو نے تین طلاق کے فیصلہ کا کیا خیر مقدم، کہا آج کا دن خواتین کے لئے تاریخی اہمیت کا حامل

Aug 22, 2017 02:57 PM IST | Updated on: Aug 22, 2017 03:18 PM IST

نئی دہلی۔ مسلم معاشرے میں رائج متواتر تین طلاق کے خلاف عدالتی لڑائی لڑنے والی سائرہ بانو نے سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن خواتین کے لئے تاریخی اہمیت کا حامل ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد محترمہ بانو نے کہا کہ ہم اس کا استقبال کرتے ہیں اور خواتین کو صورتحال کو سمجھتے ہوئے اس فیصلے کو تسلیم کرنا چاہئے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس سے متعلق جلد از جلد قانون بنائے۔

تین طلاق کی لڑائی کو انجام تک لے جانے والی اتراکھنڈ کے کاشی پور کی رہنے والی محترمہ بانو نے گزشتہ سال سپریم کورٹ کے دروازے پر دستک دی تھی۔ ان کی شادی 2001 میں ہوئی تھی۔ محترمہ بانو کے شوہر نے 10 اکتوبر، 2015 کو انہیں طلاق دے دیا تھا۔ اس کے بعد دو بچوں کی پرورش و پرداخت اور ان کی تعلیم میں دشواریاں آنے پر محترمہ بانو نے سپریم کورٹ میں عرضی دائر کرکے تین طلاق کو چیلنج کیا تھا۔

سائرہ بانو نے تین طلاق کے فیصلہ کا کیا خیر مقدم، کہا آج کا دن خواتین کے لئے تاریخی اہمیت کا حامل

تین طلاق کی لڑائی کو انجام تک لے جانے والی اتراکھنڈ کے کاشی پور کی رہنے والی محترمہ بانو نے گزشتہ سال سپریم کورٹ کے دروازے پر دستک دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز