اکھلیش اور ملائم کے درمیان بات چیت ناکام، الیکشن کمیشن ہی کرے گا فیصلہ

Jan 03, 2017 07:42 PM IST | Updated on: Jan 03, 2017 07:42 PM IST

نئی دہلی۔ اکھلیش اور ملائم کے درمیان منگل کو تقریباً ساڑھے تین گھنٹے جاری رہنے والی بات چیت ناکام ہو گئی ہے۔ اکھلیش کیمپ کی جانب سے رام گوپال یادو نے بتایا کہ میٹنگ میں نہ ہی کوئی صلح ہوا، نہ ہی کوئی مفاہمت ہوئی ہے۔ جو بھی بات چل رہی ہے، اس کا کوئی مطلب نہیں ہے کیونکہ ہم الیکشن کمیشن جا چکے ہیں، اس پر اب وہی فیصلہ کرے گا۔

اس سے پہلے الیکشن کمیشن میں اپنا موقف رکھنے کے بعد ایس پی سپریمو ملائم سنگھ یادو لکھنو لوٹ آئے تھے۔ صبح سے ہی خبریں آنا شروع ہو گئی تھیں کہ ملائم اور اکھلیش کے درمیان صلح ہو سکتی ہے۔ اسی درمیان وزیر اعلی اکھلیش یادو ملائم سنگھ سے ملنے ان کی رہائش گاہ پہنچے۔ سماج وادی پارٹی کے مستقبل کو لے کر اس ملاقات کو کافی اہم مانا جا رہا تھا۔

اکھلیش اور ملائم کے درمیان بات چیت ناکام، الیکشن کمیشن ہی کرے گا فیصلہ

منگل کو تقریبا تین گھنٹے بیس منٹ کی ملائم کے ساتھ ملاقات ختم ہونے کے بعد اکھلیش پہلے بغل کی اپنی رہائش گاہ گئے، اس کے بعد وہ براہ راست وزیر اعلی رہائش گاہ کے لئے روانہ ہو گئے۔ شیو پال اب بھی ملائم کے گھر پر ہیں۔

اس سے پہلے شیو پال سنگھ یادو نے کہا تھا کہ مجھے ملاقات کے بارے میں پتہ نہیں ہے، اگر نیتا جی بلاتے ہیں تو ضرور جاؤں گا۔ شیو پال کا بیان آنے کے کچھ دیر بعد ہی وہ خود اپنے بیٹے آدتیہ کے ساتھ ملائم کے گھر پہنچ گئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز