سعودی عرب کی ترقی کے سفر میں ایک اہم اسٹریٹیجک پارٹنر ہے ہندوستان : سعودی سفیر ڈاکٹر ساطی

Sep 22, 2017 06:14 PM IST | Updated on: Sep 22, 2017 06:15 PM IST

نئی دہلی: ہندوستان میں سعودی عرب کے سفیر ڈاکٹر سعود بن محمد الساطی نے ہندوستان کو سعودی عرب کی ترقی کے سفر میں اسٹریٹیجک پارٹنر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مستقبل میں دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تعلقات نئی بلندیوں کو چھوسکتے ہیں۔ مملکت سعودی عربیہ کے قومی دن کے موقع پر دئے گئے اپنے پیغام میں ڈاکٹر الساطی نے کہا کہ دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات کی جڑیں کافی گہرائی تک پیوست ہیں اور بڑھتے ہوئے اقتصادی تعلقات، مختلف شعبوں میں تعاون اور دونوں ملکوں کے عوام کے مابین باہمی رشتوں کے مدنظر آنے والے دنوں میں یہ تعلقات نئی بلندیاں طے کریں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ ’’دونوں ملکوں کے مابین تاریخی دوستی جاری رہے گی اور پارٹنر شپ اور تعاون کے ذریعہ اسے مزید فروغ حاصل ہوگا۔‘‘

خیال رہے کہ گذشتہ برس وزیر اعظم نریندر مودی کے سعودی عرب کے دورہ کے بعد دونوں ملکوں کے اقتصادی اور اسٹرٹیجک تعلقات میں کافی اضافہ ہو اہے۔2016میں دونوں ملکوں کے مابین 63880ملین سعودی ریال کی برآمدات اور 19662ملین سعودی ریال کی درآمدات ہوئیں۔ہندوستان میں راست غیر ملکی سرمایہ کاری (ایف ڈی آئی) کے لحاظ سے سعودی عرب پندرہواں سب سے بڑ املک ہے جب کہ عرب ملکوں میں اس کا نمبر دوسرا ہے۔ایف ڈی آئی کے لحاظ سے پہلے نمبر پر متحدہ عرب امارات ہے۔

سعودی عرب کی ترقی کے سفر میں ایک اہم اسٹریٹیجک پارٹنر ہے ہندوستان : سعودی سفیر ڈاکٹر ساطی

ڈاکٹر الساطی کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اور ہندوستان کے درمیان مشترکہ ثقافتی اور عوامی تعلقات کی قدیم تاریخ رہی ہے۔اس صدی کے اوائل میں سعود ی عرب میں مقیم ہندوستانیوں کی تعداد ڈیڑھ ملین تھی جو اب بڑھ کر تین ملین سے زیادہ ہوگئی ہے۔سعودی عرب کی اقتصادی ترقی میں ہندوستانیوں نے اہم رول ادا کیا ہے ان میں ڈاکٹر، انجینئر، آئی ٹی پروفیشنلس ، مزدور ، ماہرین تعلیم، سائنس داں وغیرہ شامل ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک سعودی عرب میں کام کرنے والے ہندوستانی مزدوروں کی صورت حال کو بہتر بنانے کے لئے مل کر مسلسل کام کررہے ہیں۔ گذشتہ سال اپریل میں وزیر اعظم نریندر مودی کے سعودی عرب کے دورے کے دوران عام زمرہ کے کروروں کی تقرری کے سلسلے میں ایک معاہدہ ہوا تھا نیز گھریلو ملازمین کے سلسلے میں بھی ایک معاہدہ ہوا تھا۔

سعودی سفیر نے کہا کہ ان کے ملک میں ہندوستانیوں کو ان کی تعلیمی اور تکنیکی کارناموں، ایمانداری، ڈسپلن اور کام کے تئیں لگن کے لئے جانا جاتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سعودی حکومت ملک کی اقتصادی ترقی میں ہندوستانیوں کے تعاون کو تسلیم کرتی ہے اور ایسے تمام ضروری اقدامات کرتی ہے جس سے ہندوستانیوں کو کسی طرح کی پریشانی محسوس نہ ہو۔ انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب میں بہت سارے اسکولوں میں این سی ای آر ٹی کا نصاب پڑھایا جاتا ہے اور سی بی ایس ای کے ذریعہ امتحانات منعقد کرائے جاتے ہیں۔ ڈاکٹر الساطی نے کہا کہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی قیادت میں سعودی عرب ترقی کی نئی بلندیاں طے کرتا رہے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز