ایس بی آئی سے ختم ہوگی 27 ہزار ملازمین کی نوکری ، ویکینسی میں بھی 50 فیصد کٹوتی !۔

پبلک سیکٹر کے اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) کے ملازمین کے لئے ایک بری خبر ہے۔

Mar 26, 2017 09:45 PM IST | Updated on: Mar 26, 2017 09:45 PM IST

نئی دہلی : پبلک سیکٹر کے اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) کے ملازمین کے لئے ایک بری خبر ہے۔ اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ چھ دیگر بینکوں کا اس میں ضم ہو جانے کے بعد کمپنی تقریبا 10 فیصد ملازمین کی کٹوتی کرے گی۔ یہ تعداد ایک تخمینہ کے مطابق 27 ہزار کے آس پاس بتائی جا رہی ہے۔خیال رہے کہ ایس بی آئی میں چھ دیگر بینک بیکانیر اور جے پور اسٹیٹ بینک، میسور اسٹیٹ بینک، تراونكور اسٹیٹ بینک، پٹیالہ اسٹیٹ بینک، حیدرآباد اسٹیٹ بینک اور بھارتیہ مہیلابینک کا ضم ہونا طے ہے۔

فی الحال ایس بی آئی میں 2 لاکھ 7 ہزار ملازمین ہیں اور اس انضمام کے بعد اس کی تعداد میں 70 ہزار کا اضافہ ہوگا اور ایس بی آئی کے پاس کل ملازمین کی تعداد 2، ملین 77 ہزار ہو جائے گی۔

ایس بی آئی سے ختم ہوگی 27 ہزار ملازمین کی نوکری ، ویکینسی میں بھی 50 فیصد کٹوتی !۔

ایس بی آئی کے جنرل مینیجر رجنیش کمار کے مطابق ڈیجیٹل لین دین کو فروغ دیا جا رہا ہے اور اس انضمام کے بعد اس کے پاس افرادی قوت زیادہ ہو جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وقت کے ساتھ افرادی قوت میں کمی کی جائے گی اور ممکن ہے اگلے دو سالوں میں ہمارے افرادی قوت میں 10 فیصد کی کمی ہو۔

بینک کے مطابق کمپنی نے خود ریٹائرمنٹ کی پیشکش بھی دی ہے۔ اس کے علاوہ کٹوتی بھی ہوگی اور ہر سال کام چھوڑ نے والوں، ریٹائرڈ ہونے والوں یا خود ریٹائرمنٹ لینے والوں کی جگہ بھرتی نہیں کی جائے گی ۔ ڈیجیٹل لین دین کے چلتے بھی افرادی قوت میں کمی کی جائے گی۔

Loading...

انضمام کے بعد ایس بی آئی کے پاس کل ملازمین کی تعداد 2، ملین 77 ہزار ہو جائے گی۔ بینک حکام کے مطابق 10 فیصد افرادی قوت میں کمی کی جائے گی اس لیے تخمینے کے مطابق اس کٹوتی کے دائرے میں تقریبا 27 ہزار ملازمین آ سکتے ہیں۔بینک کے مطابق تو دو سال کے اندر اس کا اثر دکھائی دینے لگے گا ۔ ایک ہی عہدہ پر ایک سے زائد ملازمین کو ہٹایا جائے گا اور فیلڈ ملازمین کی تعداد بڑھائی جائے گی۔

تاہم بینک حکام نے واضح کیا ہے کہ نئے ملازمین کی تقرری رکے گی نہیں ، لیکن اس میں 50 فیصد کی کمی کی جائے گی۔ اب ایس بی آئی ہر سال صرف ویکینسی نکالےگی ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز