جموں و کشمیر : بی ایس ایف جوان رمیز احمد پیرا کے قتل کے بعد سلامتی دستوں کی باندی پورہ میں تلاشی مہم تیز

Sep 28, 2017 11:43 AM IST | Updated on: Sep 28, 2017 11:44 AM IST

سری نگر: سلامتی دستوں نے شمالی کشمیر میں باندی پورہ ضلع میں آج صبح بڑے پیمانے پر تلاشی مہم شروع کی جہاں کل انتہاپسندانہ حملے میں بارڈر سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) کا ایک جوان شہید ہوا تھا اور دیگر چار رشتہ دار زخمی ہوگئے تھے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ فوج، جموں و کشمیر پولیس کا خصوصی مہم دستہ (ایس او جی) اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس نے باندی پورہ ضلع کے حاجن علاقے میں کئی گاوؤں میں آج صبح سویرے مشترکہ طور پر تلاشی شروع کی۔

انہوں نےکہا کہ سلامتی دستوں نے بی ایس ایف جوان رمیز احمد پیرا کے قتل کے لئے ذمہ دار دہشت گردوں کو پکڑنے کے لئے تلاشی مہم شروع کی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ چار انتہا پسندوں کا ایک گروپ باندی پورہ سے 50 کلو میٹر دور حاجن میں پیرا کو اغوا کو کرنے کے مقصد سے ان کے گھر میں گھسے تھے لیکن گھرو الوں کے دیکھنے کے بعد انتہا پسندوں نے خود کار ہتھاروں سےگولی باری شروع کرد جس کی وجہ سے پیرا کی موقع پر ہی موت ہوگئی اور چار دیگر افراد زخمی ہوگئے۔ اس واقعہ کے بعد سے ہی فوج، سلامتی دستوں اور ریاستی پولیس نے مشترکہ طور پر تلاشی مہم شروع کردی تھی۔

جموں و کشمیر : بی ایس ایف جوان رمیز احمد پیرا کے قتل کے بعد سلامتی دستوں کی باندی پورہ میں تلاشی مہم تیز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز