Live Results Assembly Elections 2018

علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے کینیڈی ہال میں جلسۂ سیرت النبی کا انعقاد

عید میلاد النبی ﷺ کے مبارک موقع پرآج علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کی مولانا آزاد لائبریری کے مرکزی ہال میں حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ کی حیات و سیرتِ مبارکہ پر مبنی نصف درجن سے زائد زبانوں میں تقریباً پانچ سو سے زائد کتب اور50 سے زائد نادر مخطوطات اور اسلامی خطاطی کے نادر نمونوں پر مشتمل سیرت نمائش کا انعقاد کیا گیا۔

Dec 02, 2017 07:36 PM IST | Updated on: Dec 02, 2017 07:36 PM IST

علی گڑھ ۔عید میلاد النبی ﷺ کے مبارک موقع پرآج علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کی مولانا آزاد لائبریری کے مرکزی ہال میں حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ کی حیات و سیرتِ مبارکہ پر مبنی نصف درجن سے زائد زبانوں میں تقریباً پانچ سو سے زائد کتب اور50 سے زائد نادر مخطوطات اور اسلامی خطاطی کے نادر نمونوں پر مشتمل سیرت نمائش کا انعقاد کیا گیا جس کا افتتاح وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور اور ممتاز اسلامی دانشور و رکن پارلیامنٹ حضرت مولانا اسرار الحق قاسمی نے کیا۔ سیرت نمائش میں آج سے تقریباً چودہ سو سال قبل اسلام کے چوتھے خلیفہ حضرت علیؓ کے دستِ مبارک سے کوفی زبان میں لکھے گئے قرآنِ کریم کے علاوہ مغل حکمرانوں کے ذریعہ جنگ کے دوران استعمال کئے جانے والے ایک کرتہ پر لکھے مکمل قرآنِ کریم کو بھی رکھا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ہندی، انگریزی، عربی، فارسی و اردو زبان میں حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ کی حیات اور سیرتِ مبارکہ پر لکھی کتب کو بھی سیرت نمائش میں رکھا گیا ہے۔

واضح ہوکہ یہ سیرت نمائش03دسمبر 2017شام5.00بجے تک شائقین کے لئے کھلی رہے گی۔ اس موقع پر یونیورسٹی لائبریرین ڈاکٹر نبی احمد، رجسٹرار پروفیسر جاوید اختر، فائننس آفیسر پروفیسر ایس ایم جاوید اختر اور کے اے نظامی مرکز برائے قرآنی مطالعات کے ڈائرکٹر پروفیسر اے آر قدوائی کے علاوہ بڑی تعداد میں یونیورسٹی انتظامیہ کے اعلیٰ افسران اور اسٹاف اراکین بھی موجود تھے۔ اس کے علاوہ کینیڈی ہال آڈیٹوریم میں جلسۂ سیرت النبی ﷺ کا انعقاد عمل میں آیا جس کی صدارت وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے کی۔ جلسۂ سیرت النبی ﷺ کو خطاب کرتے ہوئے ممتاز اسلامی دانشور اور کشن گنج بہار سے رکن پارلیامنٹ حضرت مولانا اسرار الحق قاسمی نے کہا کہ اسلام مذہب زمین پر انسانیت، امن، ہم آہنگی اور محبت کے پیغام کے طور پر آیا تاکہ لوگ سچائی اور انصاف پر قائم رہ کر زندگی بسر کرسکیں۔

علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے کینیڈی ہال میں جلسۂ سیرت النبی کا انعقاد

سیرت نمائش میں آج سے تقریباً چودہ سو سال قبل اسلام کے چوتھے خلیفہ حضرت علیؓ کے دستِ مبارک سے کوفی زبان میں لکھے گئے قرآنِ کریم کے علاوہ مغل حکمرانوں کے ذریعہ جنگ کے دوران استعمال کئے جانے والے ایک کرتہ پر لکھے مکمل قرآنِ کریم کو بھی رکھا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حضرت محمد مصطفےٰﷺ عالمِ انسانیت کے لئے ایک نمونہ بناکر دنیا میں بھیجے گئے اور ان کے بتائے راستے پر چل کر ہی دنیا اور آخرت کو بہتر بنایا جا سکتا ہے۔ مولانا قاسمی نے کہا کہ اسلام قیامت تک انسانیت کی رہنمائی کرتا رہے گا اور قرآنِ کریم پر عمل کرنے والا انسان کبھی گمراہ نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے کہا کہ حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ کی حیاتِ مبارکہ ہمارے لئے عملی نمونہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگ سیرتِ طیبہ کا گہرائی کے ساتھ مطالعہ کرتے ہوئے اس سے سبق حاصل کریں اور کسی بھی کام کا آغاز نا امیدی کے جذبے کے ساتھ نہ کریں۔ مولانا اسرار نے کہا کہ اسلام میں شروع سے ہی حصولِ علم کی اہمیت پر کافی زور دیا ہے تاکہ لوگوں میں بیداری لاکر ان میں استحکام کو فروغ دیا جاسکے اور ان کے دل میں برائیوں کے تئیں نفرت پیدا ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی مسئلہ کا حل طاقت سے نہیں نکالا جاسکتا بلکہ اس کو اسلام کی تعلیمات محبت اور اخلاق سے حل کیا جاسکتا ہے۔ مولانا قاسمی نے کہا کہ دورِ حاضر کے مسائل کو نبیِ کریم ﷺ کی بتائی راہ پر چل کر ہی حل کیا جا سکتا ہے۔

نوگاواں سادات سے تشریف لائے ممتاز اسلامی دانشور حضرت مولانا نعیم عباس نے کہا کہ حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ تعلیم اور اخلاقیات پر کافی زور دیا ہے اور وقت کا تقاضہ ہے کہ لوگ تعلیم حاصل کرنے کے علاوہ اپنی کردار سازی کرکے خود کو رول ماڈل کے طور پردنیا کے سامنے پیش کریں۔ انہوں نے کہا کہ اللہ نے حضرت محمد مصطفےٰﷺ کو کائنات کی نجات کے لئے زمین پر بھیجا اور انہوں نے تمام تکالیف کو برداشت کرتے ہوئے انسانیت کا عظیم نمونہ پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ بچوں کو سیرتِ رسول ﷺ سے متعارف کرایا جانا چاہئے تاکہ وہ دورِ طالب علمی سے ہی سیرتِ طیبہ کے بارے میں معلومات حاصل کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ قرآنی تعلیمات سے دور ہوجانے کے سبب مسلم معاشرہ متعدد مسائل کا شکار ہے اور اس پر متعدد بے بنیاد الزامات عائد کئے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسلام کی ترویج و اشاعت طاقت کے بل پر نہیں بلکہ انسانیت اور اخلاق کے بل پر ہوئی۔

Loading...

جلسۂ سیرت النبی ﷺ کو خطاب کرتے ہوئے ممتاز اسلامی دانشور اور کشن گنج بہار سے رکن پارلیامنٹ حضرت مولانا اسرار الحق قاسمی نے کہا کہ اسلام مذہب زمین پر انسانیت، امن، ہم آہنگی اور محبت کے پیغام کے طور پر آیا تاکہ لوگ سچائی اور انصاف پر قائم رہ کر زندگی بسر کرسکیں۔ جلسۂ سیرت النبی ﷺ کو خطاب کرتے ہوئے ممتاز اسلامی دانشور اور کشن گنج بہار سے رکن پارلیامنٹ حضرت مولانا اسرار الحق قاسمی نے کہا کہ اسلام مذہب زمین پر انسانیت، امن، ہم آہنگی اور محبت کے پیغام کے طور پر آیا تاکہ لوگ سچائی اور انصاف پر قائم رہ کر زندگی بسر کرسکیں۔

پروگرام کی صدارت کرتے ہوئے وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے کہا کہ حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ کی حیاتِ مبارکہ تمام عالمِ انسانیت کے لئے ایک بہترین درس ہے جنہوں نے لوگوں کو جہالت کی تاریکیوں سے باہر نکالا۔ انہوں نے کہا کہ آج معاشرہ میں جس طرح سے عدم رواداری کا ماحول تقویت پا رہا ہے اس کو محض اسلام کے بتائے طریقوں سے ہی حل کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کو الگ تھلگ نہ رہ کر دوسرے طبقات کے ساتھ گفت و شنید سے مسائل کو حل کرنا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ اسلام میں گفت و شنید پر بہت زور دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو مختلف مسالک میں تقسیم نہ ہوکر متحد رہ کر ہم آہنگی کے ماحول کے فروغ کے لئے کام کرنا چاہئے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز