علاحدگی پسند لیڈر میرواعظ عمر فاروق کا عید الاضحی کے موقع پر قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ

Aug 31, 2017 10:24 PM IST | Updated on: Aug 31, 2017 10:24 PM IST

سری نگر : حریت کانفرنس (ع) کے چیئرمین میرواعظ مولوی عمر فاروق نے جموں وکشمیر اور ملک کی مختلف ریاستوں کی جیلوں اور تعذیب خانوں میں سالہا سال سے مقید سینکڑوں کشمیری نوجوانوں اور سیاسی نظر بندوں کی حالت زار کو حقوق بشر کے عالمی اداروں کے لئے چشم کشا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جیلوں اور تعذیب خانوں میں مقید ان لوگوں کو جرم بے گناہی کی پاداش میں مسلسل نظر بند رکھ کر ان کی زندگیوں کے ساتھ کھلواڑ کیا جارہا ہے ۔

انہوں نے عید الاضحی کے مقدس موقع پر ان قیدیوں کی فوری اور غیر مشروط رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جیلوں میں ان قیدیوں کے ساتھ نہ صرف غیر انسانی برتاؤ روا رکھا جارہا ہے بلکہ ان کی مدت قید کو بلا وجہ طول دینے کے لئے عدالتوں میں تاریخ ہائے پیشیوں پر پیش کرنے میں بھی لیت و لعل سے کام لیا جارہا ہے ۔ میرواعظ نے کہا کہ ان قیدیوں کو لمبی مدت تک جیلو ں میں بند رکھنے کا کوئی قانونی اور اخلاقی جواز نہیں ہے اور حکومت ہندوستان اور ا س کے ریاستی اتحادی کشمیریوں کے جذبہ مزاحمت کو توڑنے کے لئے اس طرح کے غیر جمہوری ہتھکنڈے بروئے کار لارہی ہے ۔

علاحدگی پسند لیڈر میرواعظ عمر فاروق کا عید الاضحی کے موقع پر قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ

انہوں نے قومی تحقیقاتی ایجنسی این آئی اے اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے ذریعہ متعدد کشمیری رہنماؤں ، کارکنوں اور تاجر برادری سے وابستہ افراد کو مسلسل حراست میں رکھنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے حربوں سے نہ تو کشمیری مزاحمتی قیادت کوخوفزدہ کیا جاسکتا ہے اور نہ ان کو اپنے مبنی برحق جدوجہد سے دستبردار کرایا جاسکتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز