قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کی خود مختار حیثیت ختم کرنے کی خبر پر شمس الرحمان فاروقی کا اظہارتشویش

Jul 21, 2017 06:11 PM IST | Updated on: Jul 21, 2017 06:12 PM IST

الہ آباد : قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کی خود مختار حیثیت ختم کئے جانے اور اس کو کسی بڑے ادارے سے وابستہ کئے جانے کی خبر نے اردو داں حلقہ میں ہلچل پیدا کر دی ہے ۔ مشہور محقق اور قومی اردو کونسل کے سابق ڈائرکٹر پروفیسر شمس الرحمان فاروقی نے اس معاملہ میں اپنی سخت تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ پروفیسر شمس الرحمان فاروقی کا کہنا ہے کہ قومی اردو کونسل اردو زبان و ادب کا ایک بڑا ادارہ ہے ، اگر اس کے اختیارات ختم کردئے گئے ، تو اس سے زبان و ادب کا نا قابل تلافی نقصان ہوگا۔

پروفیسر فاروقی کے کہنا ہے کہ اگر حکومت قومی اردو کونسل کے اختیارات ختم کرنے یا اس کو کسی بڑے ادارے سے وابستہ کرنے کا فیصلہ لیتی ہے تو اردو والے اس فیصلہ کے خلاف پورے ملک میں تحریک چلائیں گے ۔

قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کی خود مختار حیثیت ختم کرنے کی خبر پر شمس الرحمان فاروقی کا اظہارتشویش

ساتھ ہی ساتھ شمس الرحمان فاروقی نے قومی اردو کونسل کے وجود کو بچانے کے لئے اردو داں طبقہ سے آگے نے کی بھی اپیل کی ۔ پروفیسر فاروقی نے کہا کہ وہ بذات خود قومی اردو کونسل کے تحفظ کیلئے اپنا فعال کر کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز