مولانا کلب جواد نے یوگی حکومت کے فیصلہ کا خیر مقدم کیا ، وسیم رضوی پر لگائے سنگین الزامات

Jun 17, 2017 10:34 AM IST | Updated on: Jun 17, 2017 10:34 AM IST

لکھنو : معروف شیعہ عالم دین مولانا کلب جواد نے جمعہ کو شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی اور سابق وزیر اعظم خاں پر شدید حملہ كيا ۔ انہوں نے ای ٹی وی / نیوز 18 سے بات چیت میں کہا کہ وسیم رضوی بدعنوانی میں شامل ہیں ۔ انہوں نے کروڑوں کی زمینوں کی ہیرا پھیری ہے ۔

کلب جواد نے کہا کہ ابھی دو مہینے پہلے ہی بی جے پی حکومت میں رضوی نے میرٹھ موٹروے پر 50 کروڑ کی زمین کوڑیوں کے بھاو بیچ دی ۔ اتنا ہی نہیں انہوں نے ایک بلڈر کے ساتھ مل کر اموسی کے پاس 1000 بیگھہ سرکاری زمین کو جعلی وقف نامہ بنوا کر بیچ ڈالا ۔

مولانا کلب جواد نے یوگی حکومت کے فیصلہ کا خیر مقدم کیا ، وسیم رضوی پر لگائے سنگین الزامات

انہوں نے حکومت کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پورے معاملہ کی سی بی آئی جانچ ضرور ہونی ہونا چاہئے ۔ جواد نے کہا کہ چیئرمین کو ہٹانے کا ایک عمل ہے ، اس کے تحت پہلے نوٹس دیا جاتا ہے ، اس کے علاوہ اگر وقف بورڈ کے اراکین تحریک لائیں تو بھی انہیں ہٹایا جا سکتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ رضوی اور اعظم خان کے خلاف سی بی آئی جانچ ضرور ہونی چاہئے ۔ شیعہ اور سنی وقف بورڈ میں جم کر گندگی پھیلی ہوئی ہے ۔ ابھی یوگی حکومت نے ان بے ایمان کے خلاف قدم اٹھایا ہے ۔ جواد نے کہا کہ شیعہ وقف بورڈ میں تو ان جیسے لوگ بدعنوانی کے خلاف آواز اٹھاتے رہے ہیں ، لیکن سنی وقف بورڈ میں تو کوئی بھی کچھ نہیں بولتا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز