شوپیان : انکاونٹر میں دو فوجی جوان شہید ، ایک دہشت گرد کو مار گرایا گیا ، مزید کے چھپے ہونے کا امکان

Aug 13, 2017 10:03 AM IST | Updated on: Aug 13, 2017 10:03 AM IST

سری نگر : جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان میں گذشتہ شام سے جاری مسلح تصادم کے دوران اب تک 2 فوجی اور ایک جنگجو ہلاک جبکہ 3 سیکورٹی فورس اہلکار زخمی ہوگئے ہیں۔  سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع شوپیان کے آنیورہ میں حزب المجاہدین سے وابستہ جنگجوؤں کے ایک گروپ کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فوج کی راشٹریہ رائفلز، جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس نے گذشتہ شام مذکورہ علاقہ میں مشترکہ تلاشی آپریشن شروع کیا۔

انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز جب مذکورہ گاؤں کے آستان محلہ میں ایک مخصوص جگہ کی جانب پیش قدمی کررہے تھے تو وہاں موجود جنگجوؤں نے ان پر اندھا دھند فائرنگ کی۔ ذرائع نے بتایا ’سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی اور جنگجوؤں کی طرف سے کی گئی فائرنگ کے نتیجے میں ایک افسر سمیت پانچ فوجی اہلکار زخمی ہوگئے‘۔ انہوں نے بتایا ’زخمیوں میں سے دو فوجی اہلکار اسپتال پہنچائے جانے سے قبل ہی دم توڑ گئے۔ باقی زخمیوں کو علاج ومعالجہ کے لئے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے‘۔

شوپیان :  انکاونٹر میں دو فوجی جوان شہید ، ایک دہشت گرد کو مار گرایا گیا ، مزید کے چھپے ہونے کا امکان

file photo

ایک رپورٹ میں ایس ایس پی شوپیان کے حوالے سے کہا گیا کہ مسلح تصادم میں اب تک ایک جنگجو کو ہلاک کیا جاچکا ہے۔ سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ جنگجوؤں کو فرار ہونے سے روکنے کے لئے علاقہ میں سیکورٹی فورسز کی مزید نفری بھیجی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ طرفین کے مابین گولیوں کا تبادلہ وقفے وقفے سے جاری ہے۔

شوپیان ضلع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق آنیورہ میں جنگجوؤں کا سیکورٹی فورسز کے محاصرے میں پھنسنے کی خبریں پھیلنے کے ساتھ ہی گذشتہ رات مذکورہ ضلع کے مختلف علاقوں میں لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپیں شروع کیں۔ ان اطلاعات کے مطابق سیکورٹی فورسز نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے علاوہ چھرے والی بندوقوں کا بھی استعمال کیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سوشل میڈیا اور فون رابطوں کے ذریعے افواہوں کو روکنے کے لئے پوری ضلع شوپیان میں موبائیل فون اور انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز