سدھارتھ نگر ضلع انتظامیہ کو کان کنی کے ٹھكانوں پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کی سی بی آئی کی ہدایت

Mar 06, 2017 10:50 PM IST | Updated on: Mar 06, 2017 10:50 PM IST

سدھارتھ نگر: تقریباً نصف درجن دریاؤں سے گھرے سرحدی ضلع سدھارتھ نگر میں غیر قانونی طور پر کان کنی کے لیے مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے ضلع انتظامیہ کو خط لکھ کر کان کنی کے ممکنہ ٹھكانوں پر کلوز سرکٹ ٹی وی (سی سی ٹی وی) کیمرے لگانے کو کہا ہے۔

سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ سی بی آئی نے اس سلسلے میں ضلع مجسٹریٹ کو خط لکھ کر کان کنی کی جگہوں پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کو کہا ہے۔ذرائع کے مطابق ضلع میں ایک بھی منظور شدہ کان نہ ہونے کے باوجود غیر قانونی کان کنی کا کام بلا روک ٹوک چل رہا ہے۔

سدھارتھ نگر ضلع انتظامیہ کو کان کنی کے ٹھكانوں پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کی سی بی آئی کی ہدایت

ریاست میں غیر قانونی کان کنی کے بارے میں عدالت کے سخت موقف کے بعد معاملے کی جانچ سی بی آئی کے سپرد کی گئی تھی۔ نیپال کے پہاڑوں سے نکلنے والی نصف درجن ندیاں ضلع سے ہوکر ہی گزرتی ہیں۔ ان میں راپتی، بوڑھی راپتی، کوڑا، گھونگھي، بان گنگا اہم ہیں۔ ہزاروں ایکڑ کھیتوں کو سیراب کرنے والی یہ ندیاں کان کنی کے غیر قانونی کاروباریوں کو بھی خوب مالا مال کرتی آئی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز