سدھار تھ نگر : سیلاب سے 600 گاوں متاثر، مہلوکین کی تعداد 20 ہوئی ، ہزاروں افراد مہلک بیماریوں کی زد میں 

Aug 26, 2017 01:06 PM IST | Updated on: Aug 26, 2017 01:12 PM IST

سدھارتھ نگر: نیپال کی بین الاقوامی سرحد سے ملحق اترپردیش کے ضلع سدھارتھ نگر میں سیلاب کے پانی سے 373گاوں چاروں طرف سے گھر گئے ہیں۔ سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ راپتی، بوڑی اور کوڈا ندی خطرے کے نشان سے اوپر بہہ رہی ہیں۔ حالانکہ ندیوں کی آبی سطح میں آرہی ہے لیکن سست رفتار کی وجہ سے ضلع میں سیلاب متاثرین کی مشکلیں برقرار ہیں۔

راپتی ندی خطرے کے نشان سے 40سنٹی میٹر اوپر، بوڑی راپتی ایک میٹر 25 سنٹی میٹر اوپر، کوڈا 50 سنٹی میٹر اوپر اور جموار نالہ کے ایک میٹر 30سنٹی میٹر اوپر بہنے سے ضلع کی پانچوں تحصیل کے600سے زیادہ گاوں سیلاب کی زد میں ہیں۔ ان میں سے 373گاوں سیلاب کے پانی سے چاروں طرف سے گھر ہوئے ہیں۔

سدھار تھ نگر : سیلاب سے 600 گاوں متاثر، مہلوکین کی تعداد 20 ہوئی ، ہزاروں افراد مہلک بیماریوں کی زد میں 

فائل فوٹو

کشتیوں کی کمی کی وجہ سے سیلاب سے گھر ے گاوؤں میں راحت نہ پہنچنے کی وجہ سے سیلاب متاثرین فاقہ کرنے پر مجبور ہیں ۔ لوگ گھروں کی چھتوں ، باندھوں اور اونچے مقامات پر پناہ لئے ہوئے ہیں۔ ضلع کے 85ہزار سیلاب سے متاثر کنبوں میں سے اب تک 31871کنبوں کو راحت مل سکی ہے ۔ راحت و بچاؤ ک اکام تیز کرنے کے لئے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کو 35 سیکٹروں میں تقسیم کرکے گزیٹڈ افسروں کو سیکٹر کا انچارج بنایا گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ سیلاب سے متاثر ہ علاقوں میں 47سیلاب چوکیاں، 11 راحت کیمپ اور 17تقسیم مراکز کام کررہے ہیں۔ ان علاقوں میں 235 کشتیاں، 13موٹر بوٹ، پی اے سی اور قومی آفت منیجمنٹ کی ٹیم راحتی اشیا کی تقسیم اور سیلاب میں پھنسے لوگوں کو نکالنے میں مصروف ہیں۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سیلاب سے مزید ایک شخص کی موت ہوجانے سے ضلع میں سیلاب سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 20ہوگئی ہے۔ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں مہلک بیماریاں پھیلنے سے ہزاروں لوگ ان بیماریوں کی زد میں آچکے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز