انفارمیشن ڈائریکٹر سے سسودیا ناراض، ہٹانے کے لئے چیف سکریٹری کو لکھا خط

Jun 07, 2017 04:25 PM IST | Updated on: Jun 07, 2017 04:25 PM IST

نئی دہلی۔  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا انفارمیشن اینڈپبلسٹی کے ڈائریکٹر (ڈی آئی پی) کے کام کاج سے ناراض ہیں اور چیف سکریٹری کو ڈائریکٹر جے دیو سارنگی کو ہٹانے کو کہا ہے۔ مسٹر سسودیا نے پانچ جون کو مکتوب خط میں چیف سیکرٹری این ایم کٹٹی سے مسٹر سارنگی کو ہٹا کر کسی اور افسر کو مقرر کرنے کی ہدایت دی ہے۔ نائب وزیر اعلی نے کہا ہے کہ جس کام کے لیے مسٹر سارنگی کو مجازبنایا گیا ہے، اس میں وہ "ناکام" رہے ہیں۔

مسٹر سارنگی کا تازہ معاملہ اشیا اور سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) پر تاجروں کے ساتھ بات چیت سے منسلک ہے۔ مسٹر سسودیا اس پروگرام کو فیس بک پر لائیو دکھانا چاہتے تھے۔ لیکن مسٹر سارنگی نے اس کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ مسٹر سارنگی کی دلیل تھی کہ ایسے پروگرام کو منعقد کرنے کے لیے اوپن ٹینڈر کی ضرورت ہوتی ہے۔

انفارمیشن ڈائریکٹر سے سسودیا ناراض، ہٹانے کے لئے چیف سکریٹری کو لکھا خط

فائل فوٹو: پی ٹی آئی

مسٹر سسودیا جو ڈی پی آئی کے سربراہ بھی ہیں، نے خط میں لکھا ہے کہ افسر کو یہ نہیں معلوم ہے کہ ایسے پروگرام کو کھلی ٹینڈر کی ضرورت نہیں ہوتی، بلکہ ایک انٹرنیٹ کنکشن اور کیمرے کی ضرورت پڑتی ہے۔ خط میں اس سے پہلے بھی ایک اشتہار کی اجازت نہ دینے کا ذکر کیا گیا ہے۔ دہلی حکومت حال ہی میں مزدوروں کے لئے نافذ کئے گئے کم از کم اجرت کے منصوبہ کے لئے اشتہاراتی مہم چلانا چاہتی تھی، لیکن دیو نے اس کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا۔

یو این آئی۔ ع ا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز