الہ آباد یونیورسٹی میں عربی ،فارسی اور اردو شعبوں میں شروع کی جائیں گی اسمارٹ کلاسیز

Mar 08, 2017 01:09 PM IST | Updated on: Mar 08, 2017 01:09 PM IST

الہ آباد۔ مشرق کا آکسفورڈ کہی جانے والی الہ آباد یونیورسٹی ملک کی پہلی یونیورسٹی ہے جہاں سب سے پہلےاردو کی اعلیٰ تعلیم کا آغاز ہوا تھا ۔ یہاں کا شعبہ اردو ملک کا قدیم ترین شعبہ اردو ہے۔ الہ آباد یونیورسٹی کے موجودہ وائس چانسلر پروفیسر رتن لال ہانگلو نے یونیورسٹی میں تعلیمی اصلاحات کا کا آغاز کیا ہے ۔اصلاحات کے  تحت  عربی، فارسی  اور اردو شعبہ جات کو  جدید تکنیک سے آراستہ کیا جا رہا ہے ۔

کسی زمانے میں الہ آباد یونیورسٹی اپنے تعلیمی معیار اور ثقا فتی سر گرمیوں کی وجہ سے پورے ملک میں ایک ممتاز مقام رکھتی تھی لیکن گذرتے وقت کے ساتھ  ساتھ یہاں کا تعلیمی معیار بھی زوال کا شکار ہوتا گیا ۔الہ آباد یونیورسٹی کے وائس چانسلر پرو فیسر رتن لال ہانگلو نے  نئے تعلیمی اصلاحات کی شروعات کی ہے ۔ان اصلاحات کے تحت اسمارٹ کلاسیز کی شروعات، درس و تدریس میں ڈیجٹل تکنیک کا زیادہ سے زیادہ استعمال کا منصوبہ بنایا گیا ہے ۔ پروفیسر رتن لال ہانگلو کا کہنا ہے کہ برسوں سے عدم توجہی کا شکار رہنے والے عربی، فارسی اور اردو شعبوں  کو خاص طور سے اس منصوبے میں شامل کیا گیا ہے ۔

الہ آباد یونیورسٹی میں عربی ،فارسی اور اردو شعبوں میں شروع کی جائیں گی اسمارٹ کلاسیز

الہ آباد یونیورسٹی کے شعبہ اردو میں  ملک کے چوٹی کے ادیبوں اور نقادوں نے اپنی تدریسی خدمات انجام دی ہیں   ۔ تدریس کا طریقہ  آج بھی ایک صدی پرانا ہے  ۔شعبے کے سینئر استاد پروفیسر علی احمد فاطمی وی سی  ہانگلو کے ذریعے شروع کی گئیں  اصلاحات کے منصوبے کو ایک اہم  تبدیلی  مان رہے ہیں ۔ یونیورسٹی کا  نیا تعلیمی سیشن  آیندہ جولائی سے شروع ہوگا ۔ وی سی رتن لال ہا نگلو کا کہنا ہے کہ وہ نئے تعلیمی میقات میں اصلاحات کے منصوبے  کو پوری طرح نافذ کریں گے ۔ پروفسر رتن لال ہانگلو کو امید ہے کہ عربی ،فارسی اور اردو کے شعبوں  میں اسمارٹ کلاسیز اور ڈیجیٹل سہولیات کے استعمال سے روایتی درس و تدریس میں انقلابی تبدیلی آئے گی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز