سماجی کارکن سیما آزاد اور وشوا وجئے کی جیل ڈائری ' زنداں نامہ' منظر عام پر

Jul 26, 2017 08:14 PM IST | Updated on: Jul 26, 2017 08:14 PM IST

 الہ آباد۔ دہشت گردی کے نام پرسینکڑوں مسلمان جیلوں میں بند ہیں ۔عدالت کے ذریعے بے قصور قرار دئے گئے بعض قیدیوں نے جیل کی یاد داشتیں بھی لکھی ہیں ۔ انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی معروف سماجی کارکن سیما آزاد اور ان کے شوہر وشو وجئے کو ملک مخالف سرگرمی کے تحت گرفتار کیا گیا تھا ۔ دونوں نے  ایک طویل عرصہ جیل میں گذارا۔ چند مہینہ پہلے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر ان دونوں کو ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے ۔ سیما آزاد اور وشووجئے کی جیل ڈائری ’’ زنداں نامہ ‘‘ کے نام سے منظرعام پر آئی ہے ۔

انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی ملک کی معروف کارکن سیما آزاد اور ان  کے شوہر وشوا وجئے کو پولیس نے ملک مخالف سرگرمیوں کے الزام میں گرفتار کیا تھا ۔ سیما آزاد اور وشو  وجئے پرا لزام تھا کہ یہ دونوں ماؤ نواز رجحان کو سماج میں  فروغ دینے کا کام کر رہے ہیں ۔ تقریباً تین برس جیل میں رہنے کے بعد الہ آباد ہائی کورٹ نے ان دونوں کو رہا کرنے کا حکم دیا تھا ۔ سیما آزاد اور وشووجئے نے  جیل کی یادداشتوں پر مشتمل کتاب لکھی ہے ۔ زنداں نامہ کے نام سے شائع ہونے والی  اس کتاب میں انکشاف کیا گیا ہے کہ جیلوں میں دلتوں اور مسلمانوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے ۔ کتاب ’’زنداں نامہ ‘‘کا رسم اجرا ملک کے ممتاز ادیبوں اور سماجی کرکنان نے مل کر کیا ۔ جلسے میں سیما آزاد اور وشو  وجئے نے جیل کے دوران اپنے ذاتی تجربات  سے سامعین  کو آگاہ کیا ۔ دانشوروں کا خیال ہے کہ زنداں نامہ سماجی ادب میں ایک نیا اضافہ ہے ۔

سماجی کارکن سیما آزاد اور وشوا وجئے کی جیل ڈائری  ' زنداں نامہ' منظر عام پر

زنداں نامہ کی اہم  بات یہ ہے کہ اس میں جیلوں میں بند خواتین کے مسائل اور ان کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کی دردناک داستان ہے ۔ سیما آزاد کا کہنا ہے کہ جیلوں میں بند نوے فیصد خواتین بے قصور ہوتی ہیں یا بہت معمولی جرائم میں جیلوں میں بند کردی جاتی ہیں ۔ زنداں نامہ کی دونوں جلدوں میں ملک کی جیلوں میں بند بے قصور مسلمانوں، دلتوں اور خواتین کی ان کہی داستان  پوشیدہ ہے ۔

ری کمنڈیڈ اسٹوریز