یوگی حکومت کے خلاف ایس پی-بی ایس پی 'متحد'، گورنر کے خطاب پر ہنگامہ

May 15, 2017 01:42 PM IST | Updated on: May 15, 2017 01:43 PM IST

لکھنئو۔ یوپی اسمبلی کے مشترکہ اجلاس میں پیر کو اپوزیشن جماعتوں خاص طور پر سماج وادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی کے ممبران اسمبلی نے جم کر ہنگامہ کیا۔ دونوں ایوانوں سے خطاب کرنے پہنچے گورنر رام نائیک کے خطاب شروع کرتے ہی اپوزیشن نے ہنگامہ شروع کر دیا۔ ایوان میں ممبران اسمبلی کے اس رویے سے گورنر ناراض ہو گئے۔ انہوں نے کہا کہ پورا اتر پردیش آپ کو دیکھ رہا ہے۔ ممبران اسمبلی کا ایوان میں یہ رویہ ٹھیک نہیں ہے۔ حالانکہ گورنر نے بھاری ہنگامے کے درمیان خطاب جاری رکھا۔

صبح 11 بجے جیسے ہی گورنر خطاب پڑھنے کے لئے ایوان میں پہنچے، قانون وانتظام کی صورت حال کے معاملے پر اپوزیشن نے متحد ہوکر یوگی حکومت کی مخالفت کرنا شروع کر دی۔ اس دوران کچھ ارکان نے گورنر کے اوپر کاغذ کے ٹکڑے پھینکے۔ ہنگامہ کر رہے اپوزیشن کے کئی رکن ویل میں گھس گئے۔ کچھ نے اپنی اپنی نشستوں پر ہاتھوں میں پوسٹر بینر لے کر ہنگامہ کیا۔ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ ایوان میں ممبران اسمبلی کا ہنگامہ دیکھتے رہے۔

یوگی حکومت کے خلاف ایس پی-بی ایس پی 'متحد'، گورنر کے خطاب پر ہنگامہ

سماج وادی پارٹی کے لیڈر رام گووند چودھری نے کہا، تمام اپوزیشن جماعتوں کے سینئر لیڈروں کو ایک ساتھ ملاقات کر متحدہ حکمت عملی بنانی چاہئے۔ انہوں نے کہا، 'اگر فرقہ وارانہ قوتوں کے خلاف اپوزیشن متحد نہیں ہوا تو یہ طاقتیں (فرقہ پرست) سب کچھ تباہ کر دیں گی۔ پہلی بار اسمبلی کے پہلے سیشن کی کارروائی دوردرشن کے ذریعے براہ راست نشر ہو رہی ہے۔ 15 سے 22 مئی تک مجوزہ اجلاس میں حکومت اتر پردیش ریاستی اشیا اور خدمات ٹیکس بل بھی پیش کرے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز