مایاوتی کی بڑھ سکتی ہیں مشکلیں ، یوگی حکومت چینی ملوں کے فروخت کی کرائے گی جانچ

Apr 08, 2017 12:56 PM IST | Updated on: Apr 08, 2017 12:56 PM IST

لکھنؤ: اتر پردیش کی حکومت نے مایاوتی کے دور حکومت میں 21 چینی ملوں کو فروخت میں ہونے والے تقریبا 1100 کروڑ روپے کے مبینہ گھپلے کی جانچ کے احکامات دیتے ہوئے کہا ہے کہ ضرورت پڑنے پر اس معاملے کی جانچ مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) کے سپرد کی جا سکتی ہے۔

وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے یہ حکم کل آدھی رات کے بعد یہاں گننا ترقی اور چینی صنعت کے محکمہ پرزنٹیشن کے وقت دیئے۔ سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ کہ وزیر اعلی نے گنا کسانوں کو پیرائی کے دوران 17۔ 2016 کے بقایا گنا قیمت ادا کسانوں کو آئندہ 23 اپریل تک کرانے کے ساتھ ہی سال11۔ 2010 میں 21 چینی ملوں کو فروخت میں ہونے والے تقریباً 1100 کروڑ روپے کے مبینہ گھپلے کی جانچ کرانے کے بھی ہدایت دی ہے۔

مایاوتی کی بڑھ سکتی ہیں مشکلیں ، یوگی حکومت چینی ملوں کے فروخت  کی کرائے گی جانچ

انہوں نے کہا کہ کہا کہ ضرورت پڑنے پر اس معاملے کی جانچ سی بی آئی سے بھی کرائی جا سکتی ہے۔ کسی بھی شخص کو سرکاری املاک کو سستے داموں فروخت کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ عوام کی ملکیت ہے، جس کا غلط استعمال قطعی نہیں ہونے دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بقایا گنا قیمت ادا نہ کرنے والی شوگر مل مالکان کے خلاف مقدمہ درج کراکر سخت سے سخت کارروائی کو یقینی بنائی جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز