بوفورس گھوٹالہ کیس کی دوبارہ سماعت پر سپریم کورٹ رضامند ، اکتوبرمیں شروع ہوگی سنوائی

سپریم کورٹ بوفورس توپ گھپلہ معاملے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر اجے اگروال کی درخواست پر اکتوبر میں سماعت کریگی۔

Sep 01, 2017 01:11 PM IST | Updated on: Sep 01, 2017 01:12 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ بوفورس توپ گھپلہ معاملے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر اجے اگروال کی درخواست پر اکتوبر میں سماعت کریگی۔ چیف جسٹس دیپک مشرا، جسٹس اے ایم كھانویلكر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے معاملہ پر فوری سماعت کی مسٹر اگروال کی درخواست منظور کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس کی سماعت اکتوبر میں کریگی۔

مسٹر اگروال نے عدالت میں عرضی دائر کرکے بوفورس گھپلہ معاملے کی دوبارہ سماعت کرنے کی درخواست کی ہے۔ ان کی دلیل ہے کہ اس معاملے میں مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے 31 مئی 2005 کو دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کو عدالت میں چیلنج نہیں کیا۔ سال 2005 میں دہلی ہائی کورٹ نے گھپلہ کے ملزمان ہندوجا برادران کے خلاف سبھی الزامات کو خارج کردیا تھا۔

بوفورس گھوٹالہ کیس کی دوبارہ سماعت پر سپریم کورٹ رضامند ، اکتوبرمیں شروع ہوگی سنوائی

دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کے 90 دن کے اندر اندر سی بی آئی کی طرف سے سپریم کورٹ میں اسے چیلنج نہیں کئے جانے اور معاملے کو رفع دفع کئے جانے کے مبینہ الزام کے بعد مسٹر اگروال نے عرضی داخل کرکے فیصلے کو چیلنج کیا ہے۔

مسٹر اگروال نے کہا، "میں نے یہ پٹیشن ملک کے مفاد کو ذہن میں رکھ سپریم کورٹ میں دائر کی کیونکہ سی بی آئی نے بوفورس گھپلہ کے معاملے کو اس وقت آگے نہیں بڑھایا جبکہ عدالت کے فیصلے میں خامیاں تھیں ۔ اس وقت یہ کہا گیا تھا کہ وزارت قانون نے سی بی آئی کو اس کی اجازت نہیں دی۔ " مسٹر اگروال نے بی جے پی کے ٹکٹ پر رائے بریلی سے کانگریس صدر سونیا گاندھی کے خلاف 2014 کا عام انتخاب لڑا تھا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز