آئی آئی ٹی جے ای ای میں گریس مارکس سے متعلق سبھی عرضیاں مسترد ، داخلہ پر عائد پابندی بھی ختم

Jul 10, 2017 05:53 PM IST | Updated on: Jul 10, 2017 05:53 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے ملک میں آئی آئی ٹی ۔ جے ای ای کی کاونسلنگ اور داخلہ پر عائد پابندی آج ختم کردی ۔ جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی دو رکنی بنچ نے گذشتہ سات جولائی کااپنا اسٹے آرڈر واپس لیتے ہوئے واضح کیا کہ مستقبل میں اس طرح کی غلطی دوبارہ نہیں ہونی چاہئے۔یہ تنازع دو غلط سوالات پر تمام طلبہ کو اضافی مارکس دینے کے سلسلے میں تھا۔

عدالت عظمی نے ہائی کورٹوں سے کسی بھی طرح کی گومگو کی کیفیت پیدا ہونے سے بچنے کے لئے آئی آئی ٹی میں داخلہ اور کاونسلنگ کے متعلق کسی بھی عرضی میں مداخلت نہیں کرنے کے لئے کہا ہے۔ خیال رہے کہ عدالت نے بونس مارکس دینے کے تنازع پر سماعت کرتے ہوئے آئی آئی ٹی اور این آئی ٹی میں ہونے والی کاونسلنگ پر اگلے حکم تک روک لگادی تھی۔

آئی آئی ٹی جے ای ای میں گریس مارکس سے متعلق سبھی عرضیاں مسترد ، داخلہ پر عائد پابندی بھی ختم

سپریم کورٹ آف انڈیا: فائل فوٹو

عدالت عظمی نے سابقہ سماعت کے دوران آئی آئی ٹی جے ای ای کے ایڈوانس امتحان میں تمام امیدواروں کو اضافی سات مارکس دینے کو چیلنج کرنے والی عرضی پر جواب طلب کیا تھا ۔ یہ اضافی سات مارکس ہندی زبان کے سوال میں پرنٹنگ کی غلطی کے مدنظر دئے گئے۔ اس سے پہلے اس معاملے پر عدالت عظمی نے انسانی وسائل کے فروغ کی وزارت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کاونسلنگ میں دخل دینے سے انکار کردیا تھا۔ عدالت عظمی نے آئی آئی ٹی مدراس کو بھی نوٹس جاری کیاتھا جس نے 2017 کے لئے امتحان کا انعقاد کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز