سہارا گروپ کو بڑا جھٹکا ، ایمبی ویلی کو نیلام کرنے کا سپریم کورٹ نے دیا حکم

Apr 17, 2017 05:16 PM IST | Updated on: Apr 17, 2017 05:22 PM IST

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے سہارا گروپ کے سربراہ سبرت رائے کو زبردست جھٹکا دیتے ہوئے ایمبي ویلی سٹی کو نیلام کرنے کا آج حکم دیا۔ عدالت نے بامبے ہائی کورٹ کے نیلامی افسر کو نیلامی کے عمل کو شروع کرنے کی ہدایت دی۔ ساتھ ہی سہارا سربراہ کو 28 اپریل کو عدالت کے سامنے ذاتی طور پر حاضر ہونے کا حکم بھی دیا۔

جسٹس دیپک مشرا، جسٹس رنجن گگوئی اور جسٹس اے کے سیکری کی بنچ نے سہارا گروپ کو ہدایت دی ہے کہ وہ ایمبي ویلی سٹی سے متعلق تمام ضروری معلومات 48 گھنٹے کے اندر اندر دستیاب کرائے۔ عدالت نے سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج بورڈ آف انڈیا (سیبی )اور بامبے ہائی کورٹ کے حکام کو ہدایت دی کہ ضروری دستاویزات حاصل کرنے کے بعد وہ نیلامی کا عمل شروع کر دیں۔

سہارا گروپ کو بڑا جھٹکا ، ایمبی ویلی کو نیلام کرنے کا سپریم کورٹ نے دیا حکم

سپریم کورٹ نے گزشتہ 21 مارچ کو سہارا گروپ کو آگاہ کیا تھا کہ اگر اس نے وعدے کے مطابق 17 اپریل تک 5،092 کروڑ 60 لاکھ روپے جمع نہیں کرائے، تو اس کی پونے کی ایمبی ویلی سٹی کی 39،000 کروڑ روپے کی جائیداد کی نیلامی کی جائے گی۔ بنچ نے نیویارک کے پلازہ ہوٹل میں سہارا کی حصہ داری 55 کروڑ ڈالر میں لینے کی خواہش ظاہر کرنے والی بین الاقوامی ریئل اسٹیٹ کمپنی کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنا صحیح منشا ظاہر کرنے کے لئے سپریم کورٹ کی رجسٹری کے بجائے سیبی ۔ سہارا ریفنڈ کھاتہ میں 750 کروڑ روپے جمع کرائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز