سپریم کورٹ کا توہین عدالت کے معاملہ میں جسٹس کرنن کو ضمانت دینے سے انکار

Jun 21, 2017 03:31 PM IST | Updated on: Jun 21, 2017 03:31 PM IST

نئی دہلی۔ سپریم کورٹ نے کولکاتہ ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جج سی ایس کرنن کو توہین عدالت کے معاملے میں آج ضمانت دینے سے انکار کردیا۔ جسٹس ڈی وائی چندر چوڑ اور جسٹس سنجے کشن کول کی تعطیلی بنچ نے ریٹائرڈ جج کو کوئی بھی راحت دینے سے انکار کردیا ۔سپریم کورٹ نے توہین عدالت کے معاملے میں انہیں چھ ماہ کی قید کی سزا سنائی تھی۔

بنچ نے انہیں کوئی بھی راحت دینے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ ’’سات ججوں کی بنچ نے یہ حکم پاس کیا تھا جو سب کے ساتھ ساتھ ہم پر بھی نافذ ہوتا ہے۔‘‘ قابل ذکر ہے کہ ان کے وکیل میتھیو جے نیدمپارا نے سپریم کورٹ کے سامنے کہا تھا کہ ان کے موکل کو ضمانت دے کر چھ ماہ کی قید کی سزا ملتوی کردینی چاہئے۔

سپریم کورٹ کا توہین عدالت کے معاملہ میں جسٹس کرنن کو ضمانت دینے سے انکار

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز