مویشیوں کی فروخت سے متعلق متنازع نوٹیفکیشن پر سپریم کورٹ نے مودی حکومت سے طلب کی وضاحت

Aug 04, 2017 09:02 PM IST | Updated on: Aug 04, 2017 09:02 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے آج منڈیوں میں مویشیوں کی فروخت کے بارے میں متنازع نوٹیفیکیشن پر مرکز سے وضاحت طلب کی ہے۔ جسٹس دیپک مشر ا کی صدارت والی عدالت عظمی کی ایک بنچ نے آج حکومت سے سوال کیا کہ کیا اس نوٹیفیکیشن کو پارلیمنٹ کے سامنے پیش کیا گیا تھا یا نہیں۔ضابطہ کے مطابق اس طر ح کے معاملات میں نوٹیفیکیشن اسی وقت موثر ہوتا ہے جب اسے پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے ۔ عرضی گذار آل انڈیا جمعیت القریش ایکشن کمیٹی نے الزام لگایا کہ اس نوٹیفکیشن کو پارلیمنٹ کے سامنے پیش نہیں کیا گیا تھا۔

مرکز اس کا جواب منگل کو دے گا کہ اس معاملے میں مناسب طریقہ کار اپنایا گیا تھا یا نہیں ۔ 23 مئی 2017کو جاری نوٹیفیکیشن میں منڈیوں میں مویشیوں کی فروخت کے سلسلے میں نئے ضابطے طے کئے گئے ہیں۔ مدراس ہائی کورٹ نے اس نوٹفیکیشن پر اسٹے آرڈر جار ی کردیا ہے بعد میں سپریم کورٹ نے بھی اس کو اسٹے کردیا تھا۔ نئے ضابطوں سے ذبیحہ کے لئے مویشیوں کے فروخت کا کاروبار کافی دشوار ہوگیا ہے۔

مویشیوں کی فروخت سے متعلق متنازع نوٹیفکیشن پر سپریم کورٹ نے مودی حکومت سے طلب کی وضاحت

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز