میرٹھ میں گزشتہ تین ہفتوں میں سوائن فلو کے تقریبا دو سو مریضوں میں 19 کی موت

Aug 29, 2017 08:03 PM IST | Updated on: Aug 29, 2017 08:03 PM IST

میرٹھ۔  میرٹھ ضلع میں گزشتہ تین ہفتوں میں تقریبا دو سو مریض اور ان میں 19 اموات سوائن  فلو کے خطرے کو ظاہر کرنے کے لئے کافی ہیں ۔  پچھلے سال کے مقابلے اس  سال سوائن  فلو کا خطرہ کئی  گنا زیادہ نظر آ رہا ہے اور دہلی  این سی آر کے علاقوں میں سوائن فلو کا انفیکشن  وبائی امراض کی طرح پھیل رہا ہے  ۔ جہاں سوائن فلو کی مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے , وہیں میرٹھ میں محکمہ صحت ضروری دواؤں کی کمی کا شکار ہوکر ٹیبلیٹس اور ویکسین کا انتظار کر رہا ہے ۔

دہلی  کے بعد این سی آر کے میرٹھ ضلع میں سوائن فلو کا سب سے زیادہ خطرہ محسوس کیا جا رہا ہے۔ گزشتہ تین ہفتوں میں سوائن فلو کے مریضوں میں تیزی سے اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ ایک سے دوسرے شخص میں پھیل رہے انفیکشن کو روکنے کو لیکر محکمہ صحت بھی لاچار نظر آ رہا ہے ۔  ایسے حالات میں ضروری دواؤں کی کمی ایک بڑا  مسئلہ  ثابت ہو رہی ہے ۔ سی ایم او کے مطابق انفیکشن سے کچھ حد  تک  بچاؤ کے لئے اینٹی فلو ویکسین تو موجود ہے  لیکن یہ عام مریضوں کے لئے اسپتالوں میں دستیاب نہیں ہے۔  اسٹاف کے ویکسینیشن کے  لئے بھی جن ویکسین کی ضرورت ہے اسکی سپلائی بھی  وقت پر نہیں کی جا رہی ہے ۔  اس طرح دیکھیں تو سوائن فلو سے متاثر مریضوں کے علاج کے لئے محکمہ صحت کی جانب سے انتظامات ضرور کیے گئے ہیں تاہم  انفیکشن کے پھیلنے  کے خطرے سے نمٹنے کے لئے سرکاری سطح پرانتظامات کی کمی مریضوں کی تعداد میں اضافے کا سبب ثابت ہو رہی ہے ۔

میرٹھ میں گزشتہ تین ہفتوں میں سوائن فلو کے تقریبا دو سو مریضوں میں 19 کی موت

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز