جنوبی کشمیر میں تین جنگجوؤں کی ہلاکت کے بعد کشیدگی ، پیلٹ لگنے سے نوجوان کی موت ، ریل خدمات معطل

Jun 22, 2017 09:28 PM IST | Updated on: Jun 22, 2017 09:28 PM IST

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں ایک مسلح تصادم کے دوران تین جنگجوؤں کی ہلاکت کے بعد بھڑک اٹھنے والے پرتشدد احتجاجی مظاہروں میں جمعرات کو ایک عام نوجوان ہلاک جبکہ درجنوں دیگر زخمی ہوگئے ۔ جنوبی کشمیر میں تازہ کشیدگی پیدا ہونے کے بعد وادی میں ریل خدمات کو کلی طور پر معطل کردیا گیا ہے۔ ضلع پلوامہ میں مقامی انتظامیہ کے احکامات پر جمعرات کو جہاں تمام تعلیمی ادارے بند رہے، وہیں انٹرنیٹ خدمات بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب کو ہی معطل کردی گئی تھیں۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ میں رات بھر جاری رہنے والے مسلح تصادم میں لشکر طیبہ کے 3 تین جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا جبکہ تصادم میں ایک فوجی افسر زخمی ہواہے ۔انہوں نے بتایا کہ مہلوک جنگجوؤں کی شناخت شارق و ماجد ساکنان کاکہ پورہ اور شیراز احمد ساکنہ پدگام پورہ اونتی پورہ کے بطور کی گئی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ کاکہ پورہ میں گذشتہ رات جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین مسلح تصادم شروع ہونے کے ساتھ ہی مقامی لوگوں نے جنگجو مخالف آپریشن میں خلل ڈالنے کے لئے سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ مسلح تصادم کے مقام سے جمعرات کی صبح تین مقامی جنگجوؤں کی لاشوں کی برآمدگی کے ساتھ ہی علاقہ میں پرتشدد احتجاجی مظاہروں میں شدت آئی۔

جنوبی کشمیر میں تین جنگجوؤں کی ہلاکت کے بعد کشیدگی ، پیلٹ لگنے سے نوجوان کی موت ، ریل خدمات معطل

file photo

ذرائع نے بتایا کہ کاکہ پورہ میں جھڑپوں کے دوران ایک نوجوان اس وقت ہلاک ہوگیا جبکہ سیکورٹی فورسز نے مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے شدید آنسو گیس کی شیلنگ اور پیلٹ فائرنگ کی۔ جھڑپوں میں درجنوں افراد بشمول سیکورٹی فورس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز