بی جے پی امیدوار کی بیٹی سے چھیڑ چھاڑ کے بعد یوپی کے لکھیم پور میں پھر کشیدگی

Mar 09, 2017 09:19 AM IST | Updated on: Mar 09, 2017 09:19 AM IST

لکھیم پور۔ یوپی کے لکھیم پور کھیری میں ایک بار پھر فرقہ وارانہ ماحول بگڑ گیا ہے۔ اس بار بھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک امیدوار کی بیٹی کے ساتھ مخصوص فرقہ کے نوجوانوں کی طرف سے مبینہ چھیڑ چھاڑ کے بعد بدھ کو ماحول گرما گیا۔ اس سے پہلے بھی قابل اعتراض ویڈیو کے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے سے ضلع میں کشیدگی ہو گئی تھی اور کرفیو لگانا پڑا تھا۔

بدھ کی رات کے واقعہ کے بعد کوتوالی کے پاس سینکڑوں کی تعداد میں جمع بھیڑ کو منتشرکرنے کے لئے پولیس کو ہلکا لاٹھی چارج اور طاقت کا استعمال کرنا پڑا۔ بازاریں بند کر دی گئیں۔ صورت حال پر کنٹرول قائم کرنے کے لئے ڈپٹی ضلع مجسٹریٹ سیملپال اور سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ ديپیندرناتھ چودھری نے بھاری پولیس فورس کے ساتھ پورے شہر میں پیدل ہی گشت لگائی۔

بی جے پی امیدوار کی بیٹی سے چھیڑ چھاڑ کے بعد یوپی کے لکھیم پور میں پھر کشیدگی

دراصل، بدھ دوپہر بی جے پی امیدوار یوگیش ورما کی بیٹی کے ساتھ کچھ نوجوانوں نے چھیڑ خانی کی، جس سے معاملہ بھڑکا اور خبر بی جے پی امیدوار تک پہنچی۔ بی جے پی امیدوار یوگیش ورما اور ان کے حامیوں نے ملزم کی جم کر دھنائی کی۔ اس کے بعد بی جے پی امیدوار اور ملزم کو کوتوالی پولیس نے حراست میں لے لیا اور بعد میں چھوڑ دیا۔

ادھر، عوام کا غصہ بھڑک اٹھا اور چھیڑ چھاڑ کے ملزم کو پکڑ کر خوب پیٹا۔ انہوں نے ملزم کے سر پر چوراہا بنا کر جلوس نکالنا شروع کر دیا۔ موقع پر پہنچی پولیس نے ملزم کو چھڑوا دیا۔ اسی دوران ملزم اور اس کے ساتھی موقع سے فرار ہو گئے۔ اس سے لوگ غصہ ہو گئے اور ہنگامہ کرنے لگے۔ اس دوران بی جے پی لیڈر یوگیش ورما کی اے ایس پی سے کہا سنی بھی ہو گئی۔ بھیڑ کے تیور دیکھ کر پولیس نے لاٹھی چارج کر دیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز