کشمیر شاہراہ پر دہشت گردوں کا فوجی قافلہ پر حملہ ، تین جوان زخمی ، کولگام اور اننت ناگ میں انٹرنیٹ بند

Dec 04, 2017 04:57 PM IST | Updated on: Dec 04, 2017 04:57 PM IST

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام میں سری نگر جموں قومی شاہراہ پر دہشت گردوں کی جانب سے فوجی قافلے پر حملے کے بعد طرفین کے مابین مسلح تصادم شروع ہوگیا ہے۔سرکاری ذرائع کے مطابق ضلع کولگام کے بونہ گام قاضی گنڈ میں پیر کو دوپہر کے وقت جنگجوؤں نے فوجی قافلے پر حملہ کیا۔ انہوں نے بتایا ’اس حملے میں تین فوجی اہلکار زخمی ہوئے جنہیں علاج ومعالجہ کے لئے اسپتال منتقل کیا گیا ہے‘۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حملے کے مقام سے فرار ہونے کے بعد جنگجو نزدیک میں واقع ایک اسکول میں داخل ہوئے۔ انہوں نے بتایا ’تاہم سیکورٹی فورسز نے مذکورہ اسکول کو فوری طور پر محاصرے میں لیا۔ اگرچہ جنگجوؤں کو خودسپردگی اختیار کرنے کے لئے گیا گیا، تاہم انہوں نے اس کے بجائے سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کی‘۔ انہوں نے مزید بتایا ’طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ جاری ہے‘۔

کشمیر شاہراہ پر دہشت گردوں کا فوجی قافلہ پر حملہ ، تین جوان زخمی ، کولگام اور اننت ناگ میں انٹرنیٹ بند

ہندستانی فوجی جوان ۔ فائل فوٹو

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جاری مسلح تصادم کے پیش نظر جنوبی کشمیر کے دو اضلاع کولگام اور اننت ناگ میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کی گئی ہیں۔دریں اثنا جنگجو تنظیم لشکر طیبہ نے فوجی قافلے پر حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ مقامی میڈیا نے لشکر طیبہ ترجمان ڈاکٹر عبداللہ غزنوی کے حوالے سے کہا ہے کہ بشیر لشکری اسکواڈ نے یہ حملہ انجام دیا ہے۔لشکر طیبہ ترجمان نے دعویٰ کیا ہے کہ اس حملے میں چار فوجی اہلکاروں کو ہلاک جبکہ متعدد دیگر کو زخمی کیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز