یوپی مدرسہ بورڈ سے امتحان دینے والے طلبا کی تعداد میں دو لاکھ تک کی تخفیف

Feb 28, 2017 06:01 PM IST | Updated on: Feb 28, 2017 06:01 PM IST

الہ آباد۔ تین سال  پہلے تک یو پی مدرسہ بورڈ کے سالانہ امتحانات میں بیٹھنے والے طلبا و طالبات کی تعداد پانچ لاکھ کے قریب ہوتی تھی لیکن اس سال یہ تعداد تین لاکھ سے بھی کم رہ گئی ہے ۔ یو پی مدرسہ بورڈ میں پائی جانے والی بد نظمی اور فارم کو آن لائن کیے جانے کے طور طریقے نے امتحان دینے والے طلبا کی تعداد پر سب سے برا اثر ڈالا ہے ۔ دینی مدارس سے وابستہ افراد کا خیال ہے کہ اگر یہی حالت رہی تو یہ تعداد  اور بھی کم  ہو سکتی ہے ۔

یو پی مدرسہ بورڈ سے امتحان دینے والے طلبا اور طالبات کی تعداد چند برس پہلے تک پانچ لاکھ تک پہنچ گئی تھی ۔ مدرسہ بورڈ سے امتحان دینے والوں میں سب سے زیادہ  تعداد پرائیویٹ امتحان دینے والوں کی ہوتی ہے۔ لیکن تین برس پہلے جب سے مدرسہ بورڈ نے داخلہ فارم آن لائن شروع کیا ہے اس کے  بعد سے امتحان دینے والے طلبا کی تعداد میں ہر سال کمی آتی جا رہی ہے ۔ وجہ صاف ہے ۔ ریاست کے دوردراز کے علاقوں میں نہ تو انٹر نیٹ کی سہولت ہے اور نہ ہی ان علاقوں میں بجلی کا بندو بست ۔ ان حالات میں طلبا کی تعداد کم ہونا با لکل فطری بات ہے ۔

یوپی مدرسہ بورڈ سے امتحان دینے والے طلبا کی تعداد میں دو لاکھ  تک کی تخفیف

امتحان فارم آن لائن ہونے کے علاوہ طلبا کی کم ہوتی تعداد کی کچھ اور وجہیں بھی ہیں ۔ دینی مدارس کی نمائندہ تنظیم ’’ ٹیچر س ایسوسی ایشن مدارس عربیہ ‘‘ کا کہنا ہے کہ مدرسہ بورڈ ابھی تک خود کو ’ مین اسٹریم ‘ کی تعلیم سے نہیں جوڑ پایا ہے ۔ابھی تک  مدرسہ بورڈ سر کاری مشینری سے خود کو دور رکھے ہوئے ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز