یوپی اسمبلی انتخابات : تیسرے مرحلے کی پولنگ ختم ، 63 فیصد سے زیادہ پولنگ

Feb 19, 2017 03:12 PM IST | Updated on: Feb 19, 2017 06:59 PM IST

لکھنؤ: اترپردیش اسمبلی کے لئے تیسرے مرحلے میں آج 63 فیصد سے زیادہ پولنگ ہوئی۔ اس کے ساتھ ہی سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے سابق صوبائی صدر شیو پال سنگھ یادو سمیت 826 امیدواروں کی قسمت الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) میں بند ہوگئی۔

تیسرے مرحلے میں دو لاکھ سے زیادہ سکیورٹی اہلکاروں کی نگرانی میں 12 اضلاع کی 69 سیٹوں پر پولنگ ہوئی۔ اس میں 'یادو فیملی اور مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی ساکھ خاص طور پر داؤ پر لگی ہوئی تھی کیونکہ اٹاوہ اور اس کے ارد گرد کے ساتھ ہی لکھنؤ میں بھی ووٹنگ تھی۔ مسٹر سنگھ لکھنؤ سے ممبر پارلیمنٹ ہیں۔

یوپی اسمبلی انتخابات : تیسرے مرحلے کی پولنگ ختم ، 63 فیصد سے زیادہ پولنگ

ریاست کے ایڈیشنل پولیس ڈائریکٹر جنرل (قانون) دلجیت چودھری کے مطابق اکا دکاواقعات کو چھوڑ کہیں سے ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔ اٹاوہ کے جسونت نگر علاقے میں ایک پولنگ مرکز کے باہر پتھراؤ ہوا ہے، اس میں دو لوگوں کو معمولی چوٹ لگنے کی اطلاع ہے لیکن اس سے پولنگ پر کوئی فرق نہیں پڑا ہے۔

کانپور کے گووندنگر میں دو امیدواروں کے حامیوں میں تلخ کلامی ہوئی جبکہ ارينگر علاقے میں دو گروپوں میں ووٹنگ ختم ہونے سے تھوڑی دیر قبل ہی پتھراؤ ہوا۔ کچھ لوگوں کو چوٹیں آئیں اورمتعدد گاڑیوں کو نقصان پہنچا۔ پولیس فورس نے موقع پر پہنچ کر حالات کو قابو میں کرلیا ہے۔ علاقے کے حالات کشیدہ مگر قابو میں ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز