جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں مسلح تصادم، لشکر طیبہ کے 3 مقامی جنگجو ہلاک

Jun 22, 2017 11:58 AM IST | Updated on: Jun 22, 2017 11:58 AM IST

سری نگر ۔  جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں رات بھر جاری رہنے والے مسلح تصادم میں لشکر طیبہ کے 3 تین جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔ اس مسلح تصادم میں ایک فوجی افسر بھی زخمی ہوا ہے۔ اس دوران انتظامیہ نے ضلع پلوامہ میں آج تمام تعلیمی ادارے احتیاطی اقدامات کے طور پر بند رکھنے کا اعلان کردیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے جھڑپ کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق مصدقہ اطلاع ملنے پر فوج اور جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ نے گذشتہ رات مذکورہ علاقہ میں تلاشی آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز مذکورہ علاقہ میں ایک مخصوص جگہ کی طرف بڑھ رہے تھے تو وہاں موجود جنگجوؤں نے ان پر اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا۔ انہوں نے بتایا کہ ابتدائی فائرنگ کے تبادلے میں ایک فوجی افسر زخمی ہوا جسے علاج ومعالجہ کے لئے اسپتال منتقل کیا گیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ رات بھر جاری رہا اور جمعرات کی علی الصبح مسلح تصادم کے مقام سے تین مقامی جنگجوؤں کی لاشیں برآمد کی گئیں۔ انہوں نے بتایا کہ تصادم کے مقام سے کچھ اسلحہ وگولہ بارود بھی برآمد ہوا ہے۔ ذرائع نے بتایا ’مارے گئے جنگجوؤں کے قبضے سے تین اے کے رائفلیں اور دیگر اسلحہ و گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے‘۔

جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں مسلح تصادم، لشکر طیبہ کے 3 مقامی جنگجو ہلاک

خیال رہے کہ وادی میں گذشتہ چند مہینوں میں جنگجویانہ کاروائیوں اور سیکورٹی فورسز کی جنگجو مخالف کاروائیوں میں غیرمعمولی تیزی آئی ہے۔ جنگجوؤں نے حال ہی میں ضلع اننت ناگ کے اچھہ بل میں ایک پولیس پارٹی پر گھات لگا کر حملہ کرکے ایک ایس ایچ او سمیت 6 پولیس اہلکاروں کو ہلاک کر دیا۔ شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں 21 جون کی علی الصبح حزب المجاہدین سے وابستہ دو مقامی جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز