کپواڑہ میں ہونے والے مسلح تصادم میں 3 جنگجو اور ایک 6 سالہ کمسن بچی ہلاک

Mar 15, 2017 08:43 PM IST | Updated on: Mar 15, 2017 08:43 PM IST

سری نگر۔ شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ میں بدھ کے روز جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے مابین ہونے والے مسلح تصادم میں لشکر طیبہ سے وابستہ 3 جنگجو ہلاک جبکہ ایک پولیس کانسٹیبل زخمی ہوگیا۔ جھڑپ کے مقام پر آوارہ گولیاں (سٹرے بلٹس) لگنے سے ایک 6 سالہ بچی لقمہ اجل جبکہ ایک کمسن لڑکا زخمی ہوگیا ہے۔ وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے یو این آئی کو جھڑپ کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ کپواڑہ کے جگ ڈیال ہیہامہ بٹہ پورہ میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فوج کی 41 راشٹریہ رائفلز (آر آر)، 48 بٹالین سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) اور جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ (ایس او جی) نے بدھ کی علی الصبح مذکورہ گاؤں میں تلاشی آپریشن شروع کیا۔ تاہم جب سیکورٹی فورسز علاقہ کو محاصرے میں لے رہے تھے تو وہاں موجود جنگجوؤں نے ان پر خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ کی۔

انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ ابتدائی فائرنگ میں ایک جنگجو ہلاک جبکہ ایس او جی سے وابستہ ایک کانسٹیبل زخمی ہوگیا۔ انہوں نے بتایا کہ جھڑپ کے مقام پر گھروں میں موجود لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا اور جس مکان میں جنگجو محصور تھے، کو دھماکہ خیز مواد سے اڑا دیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ جب سیکورٹی فورسز دھماکہ خیز مواد سے اڑائے گئے مکان کی طرف بڑھنے لگے تو اندر سے ایک بار پھر فائرنگ شروع ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ جوابی فائرنگ میں مزید دو جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا۔  دریں اثنا ایک پولیس ترجمان نے کہا کہ جھڑپ میں مارے گئے سبھی 3 جنگجو لشکر طیبہ سے تعلق رکھتے تھے جن کی شناخت معلوم کی جارہی ہے۔

کپواڑہ میں ہونے والے مسلح تصادم میں 3 جنگجو اور ایک 6 سالہ کمسن بچی ہلاک

فائل فوٹو

انہوں نے کہا کہ جھڑپ کے دوران زخمی ہونے والے پولیس کانسٹیبل دانش احمد کو علاج ومعالجہ کے لئے سری نگر منتقل کیا گیا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ جھڑپ کے مقام پر آوارہ گولیاں لگنے سے ایک کمسن بچی کنیزہ اور کمسن لڑکا فیصل زخمی ہوا جن کو علاج ومعالجہ کے لئے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں کمسن بچی زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسی۔

انہوں نے کہا کہ زخمی لڑکے کو علاج ومعالجہ کے لئے سری نگر منتقل کیا گیا ہے جہاں اُس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز