جنوبی کشمیر میں تصادم میں تین جنگجو ہلاک، چھ سیکورٹی اہلکار زخمی، مہم جاری

Jul 04, 2017 11:33 AM IST | Updated on: Jul 04, 2017 11:33 AM IST

سرینگر۔ جنوبی کشمیر میں تصادم میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایک اور جنگجو کے مارے جانے کے ساتھ ہی اب تک مارے گئے جنگجو ؤں کی تعداد بڑھ کر تین ہو گئی ہے اور چھ سیکورٹی اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔ سرکاری ذرائع نے يواین آئی کو بتایا کہ آخری اطلاع ملنے تک مہم جاری تھی۔ جنگجو ؤں کے خلاف مہم کو روکنے کی کوشش کر نے والے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے سیکورٹی فورسز نے آج فائرنگ کی اور آنسو گیس کے گولے داغے جس میں چار افراد زخمی ہو گئے۔

ذرائع نے بتایا کہ تصادم میں ایک اور مقامی جنگجو مارا گیا جبکہ ایک جنگجو اب بھی سیکورٹی اہلکار پر فائرنگ کر رہا ہے۔ اس دوران مقامی لوگوں نے بتایا کہ رات کے وقت فائرنگ اور دھماکوں کی آواز سنائی دے رہی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے چار مکانوں کو دھماکے کرکے اڑا دیا لیکن تب تک جنگجوؤں نے اپنا ٹھکانہ بدل لیا تھا۔

جنوبی کشمیر میں تصادم میں تین جنگجو ہلاک، چھ سیکورٹی اہلکار زخمی، مہم جاری

ہندوستانی فوج: فائل فوٹو، پی ٹی آئی

تصادم میں مارے گئے جنگجووں میں سے دوجنگجو کی شناخت تنظیم حزب المجاہدین (ایچ ایم) کے ارکان کفایت اور جہانگیر کے طور پر ہوئی ہے۔ اس مہم میں ایک افسر سمیت سیکورٹی فورسز کے چھ جوان زخمی ہوئے ہیں۔

پولیس کے ذرائع کے مطابق ضلع پلوامہ کے بهمنو گاؤں میں جنگجو وں کے چھپے ہونے کی خفیہ اطلاع پر سیکورٹی فورسز اور جموں کشمیر پولیس کی خصوصی مہم کی ٹیم (ایس او جی)  نے ان کو پکڑنے کے لئے کل صبح مشترکہ مہم شروع کی تھی۔ اس مہم کے تحت سیکورٹی فورسز کے جوان جب گاؤں میں جنگجووں کے ٹھکانے والے علاقے میں جا رہے تھے تو جنگجووں نے فائرنگ شروع کر دی۔ اس کے بعد سیکورٹی فورسز نے بھی جوابی کارروائی کی۔ انہوں نے کہا کہ جنگجووں نے پہلے سرحدی علاقے میں فرار ہونے کی کوشش کی لیکن جب وہ کامیاب نہیں ہوئے تو ایک مکان میں گھس گئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز