داخلی سلامتی کی مضبوطی اور پولیس کی تجدیدکاری کیلئے 25000 کروڑ کے تین سالہ منصوبے کو منظوری

Sep 27, 2017 06:22 PM IST | Updated on: Sep 27, 2017 06:22 PM IST

نئی دہلی: مرکزی حکومت نے ملک میں داخلی سلامتی کی صورتحال کو مضبوط بنانے کے لئے تین سالوں میں 25000 کروڑ سے زائد رقم خرچ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جس کو کابینہ نےآج منظوری دے دی ۔ اس تجویز کو وزیر اعظم نریندر مودی کی زیر صدارت سلامتی سے متعلق کابینہ کمیٹی کی میٹنگ میں منظوری دی گئی۔ کابینہ میٹنگ کے فیصلوں کی اطلاع دیتے ہوئے وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے یہاں صحافیوں کو بتایا کہ یہ منصوبہ ملک کے داخلی سلامتی کو مضبوط بنانے اور پولس کی تجدید کاری اور انتہاپسندی ، دہشت گردی اور نکسل متاثرہ اضلاع میں قانون و انتظام کو مضبوط کرنے کے لئے بنایا گیا ہے، جس میں 2017-18 سے 2019-20 تک 25060 خرچ کیا جائے گا۔

مسٹر راجناتھ سنگھ نے کہا کہ اس اسکیم کے تحت 80 فیصد رقم مرکز اور 20 فیصد ریاستی حکومتیں دیں گی۔ اس کے تحت 18636 کروڑ روپے مرکز کی طرف سے اور 6424 کروڑ روپے ریاستوں کی طرف سے خرچ کئے جائيں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ رقم ہتھیار، خواتین کی سکیورٹی، سرحدی علاقوں کے لئے ہتھیاروں کی خریداری، موبائل پولس وین اور سکیورٹی کے ساز و سامان کی خریداری پر خرچ کی جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ جموں و کشمیر، شمال مشرقی اور نکسل انتہاپسندی سے متاثرہ 35 اضلاع کے لئے 11300 کروڑ روپے خرچ کیے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ شمال مشرقی علاقے کے لئے 100 کروڑ اضافی دیئے جائیں گے۔

داخلی سلامتی کی مضبوطی اور پولیس کی تجدیدکاری کیلئے 25000 کروڑ کے تین سالہ منصوبے کو منظوری

راجناتھ سنگھ، پی ٹی آئی، فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز