لکھنؤ میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کیلئے مصنوعی بارش کرائی جائے گی: یوگی

Nov 16, 2017 01:55 PM IST | Updated on: Nov 16, 2017 01:55 PM IST

لکھنؤ۔ اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے لکھنؤ میں فضائی آلودگی پر قابو پانے کے لیے مصنوعی بارش کرانے کی ہدایت دی ہے۔ سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ وزیر اعلی مسٹر یوگی نے فضائی آلودگی روکنے کے لئے کل رات یہاں حکام کے ساتھ میٹنگ کی۔ انہوں نے فضائی آلودگی کو کنٹرول کرنے کے لئے شہری علاقوں میں کوڑا جلانے پر مکمل طور پر پابندی لگانے کی ہدایات دی۔ لکھنؤ میں اس سے نمٹنے کے لئے آئی آئی ٹی کانپور کی مدد سے مصنوعی بارش کی جائے گی، تاکہ راجدھانی کی فضائی آلودگی کوکنٹرول کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ سڑکوں پر گاڑیوں سے اڑنے والی دھول مٹی سے ہونے والی آلودگی کو روکنے کے لئے میونسپل اور فائر بریگیڈ کے ٹینکروں سے پانی کا اسپرے کیا جائے۔ فضائی آلودگی کو روکنے کے لئے تکنیکی کووسیع پیمانہ پر استعمال کیا جانا چاہیے۔

مسٹر یوگی نے کہا کہ آلودگی کے لئے شہری علاقوں میں ٹریفک جام بھی ایک مسئلہ ہے۔ شہری علاقوں میں جام سے نجات دلانےکیلئے کارگر اقدامات کئے جائیں تاکہ جام نہ لگے اور گاڑیوں سے پھیلنے والی آلودگی کم ہو۔ انہوں نے کہا کہ دیہی علاقوں میں زرعی فضلہ کو جلانے سے روکنے کے لئے ضلع مجسٹریٹوں کو ہدایت دی جائے۔ اس کے لیے کسانوں میں فضائی آلودگی کے بارے میں بیداری چلائی جائے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ لکھنؤ میٹرو کی تعمیر کے لئے شہر میں جہاں بھی سڑکوں کے کنارے کھدائی کی گئی ہے، ان کو جلد از جلد بھر دیا جائے، تاکہ وہاں سے دھول نہ اڑے اور فضائی آلودگی پر کنٹرول کیا جا سکے۔ انہوں نے محکمہ نشریات کو ایف ایم اور کمیونٹی ریڈیو کے ذریعے آلودگی روکنے کیلئےمہم چلانے کی ہدایات دیں۔

لکھنؤ میں فضائی آلودگی سے نمٹنے کیلئے مصنوعی بارش کرائی جائے گی: یوگی

مسٹر یوگی نے کہا کہ آلودگی کے لئے شہری علاقوں میں ٹریفک جام بھی ایک مسئلہ ہے۔ شہری علاقوں میں جام سے نجات دلانےکیلئے کارگر اقدامات کئے جائیں تاکہ جام نہ لگے اور گاڑیوں سے پھیلنے والی آلودگی کم ہو۔

کوڑا، زرعی فضلہ نہ جلانے اور گاڑیوں سے پھیلنے والی آلودگی کو روکنے کے سلسلے میں 15 جنوری تک ایک بیداری مہم چلائی جائے۔ اس کے ذریعہ سے لوگوں کو ٹریفک قوانین پر عمل کرنے کے لئے بھی حوصلہ افزائی کی جائے۔میٹنگ میں شہری ترقیات کے وزیر سریش کھنہ، وزیر زراعت سوریہ پرتاپ شاہی، ماحولیات کے وزیر مملکت (آزاد چارج) اپیندر تواری، چیف سکریٹری داخلہ اروند کمار، پرنسپل سکریٹری ماحولیات مسز رینوکا کمار، پرنسپل سکریٹری انفارمیشن اونیش کمار اوستھی سمیت دیگر سینئر افسران موجود تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز