تہاڑ جیل کا واقعہ ناقابل قبول ، عسکریت پسندی کی بنیادی وجہ جاننے کی ضرورت : محبوبہ مفتی

Nov 29, 2017 09:47 PM IST | Updated on: Nov 29, 2017 09:47 PM IST

کٹھوعہ : جموں وکشمیر کی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے ریاستی پولیس کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس کے اہلکار صبر اور نظم و ضبط کے ساتھ صورتحال سے نپٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کے ساتھ اچھا برتاؤ اور نظم و ضبط بہترین پولیسنگ کی کلید ہے ۔محبوبہ مفتی نے کہا کہ عسکریت پسندی کی بنیادی وجہ کی نشاندہی کر کے اس کو ختم کرنے کی ضرورت ہے۔ تہار جیل میں قیدیوں کے ساتھ برے سلوک کے حالیہ واقعے کو ناقابل قبول اور شرمناک قرار دیتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اس طرح کی حرکات میں ملوث عملے نے نہ صرف ریاست کو بدنام کیا ہے بلکہ اپنی برادری کی شبیہہ بھی خراب کی ہے ۔

پولیس ٹریننگ سکول کٹھوعہ میں بدھ کے روز یہاں 25 ویں بیچ کی اٹیسٹیشن کم پاسنگ پریڈسے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اگر چہ زمینی سطح پر بہت ساری مشکلات درپیش ہے تاہم صورتحال سے نپٹتے وقت نظم و ضبط ، لگن اور بہتر برتاؤ سے عوام کا تعاون حاصل کر کے بہترنتائج کا حصول ممکن ہے ۔

تہاڑ جیل کا واقعہ ناقابل قبول ، عسکریت پسندی کی بنیادی وجہ جاننے کی ضرورت : محبوبہ مفتی

فائل فوٹو

انہوں نے کہا کہ ایک اہل پولیس عملے کا فرض اولین لوگوں کے مال و جان کی حفاظت اور اپنے فرائض کی ادائیگی میں توازن قائم کرنا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ جموں کشمیر پولیس کا نظم و ضبط اور پیشہ وارانہ طور اپنے فرائض کی ادائیگی میں لامثال ہے ۔

ریاست کو درپیش مسائل کا ذکر کرتے ہوئے محبوبہ مفتی نے کہا کہ عسکریت پسندی کی بنیادی وجہ کی نشاندہی کر کے اس کو ختم کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ حال ہی میں انہوں نے گزشتہ سال کی شورش کے دوران نوجوانوں کے خلاف درج معاملات کاجائزہ لینے کی ہدایت دی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز