لوک سبھا میں اگلے ہفتہ پیش ہوگا تین طلاق کے خلاف بل ، تین سال کی قید اور جرمانہ کا بندوبست

لوک سبھا میں تین طلاق کے خلاف بل آج پیش نہیں کیا گیا بلکہ اب اس کو اگلے ہفتہ یعنی پیر کو پیش کیا جائے گا ۔

Dec 22, 2017 12:53 PM IST | Updated on: Dec 22, 2017 01:29 PM IST

نئی دہلی : لوک سبھا میں تین طلاق کے خلاف بل آج پیش نہیں کیا گیا بلکہ اب اس کو اگلے ہفتہ یعنی پیر کو پیش کیا جائے گا ۔ اس سے قبل قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ یہ بل جمعہ کو پارلیمنٹ میں پیش کیا جاسکتا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ لوک سبھا میں ممبران کی کم تعداد کے پیش نظر حکومت نے اس بل کو اگلےہفتہ پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ خیال رہے کہ مودی کابینہ بل کے مسودہ کو پہلے ہی منظوری دے چکی ہے ۔ اس کے تحت تین طلاق دینے والوں کو تین سال کی قید اور جرمانہ کا بندوبست کیا گیا ہے۔

مسلم وومین (پروٹیکشن آف رائٹس آف میرج ) بل 2017 کے تحت حکومت تین طلاق کو سنگین اور ناقابل ضمانت جرم بنانے جارہی ہے۔ مجوزہ بل کے مطابق کسی بھی طرح سے دئے گئے تین طلاق کو غیر قانونی اور خارج مانا جائے گا خوہ وہ زبانی طور پر یا پھر تحریری طور پر دیا گیا ہو ۔ یا پھر ای میل ، ایس ایم ایس اور وہاٹس ایپ کے ذریعہ دیا گیا ہو۔

لوک سبھا میں اگلے ہفتہ پیش ہوگا تین طلاق کے خلاف بل ، تین سال کی قید اور جرمانہ کا بندوبست

قانون کے مطابق اگر کوئی مسلمان اپنی بیوی کو تین طلاق دیتا ہے تو اس کیلئے تین سال کی قید اور جرمانہ کا بندوبست ہوگا ۔ جرمانہ کی رقم مجسٹریٹ طے کریں گے ۔ اس قانون کے مطابق خواتین اپنے نابالغ بچوں کے تحفظ کا بھی مطالبہ کرسکتی ہے ۔ تاہم اس سلسلہ میں حتمی فیصلہ مجسٹریٹ کریں گے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز