کانپور : اب اسپیڈ پوسٹ کے ذریعہ تین طلاق دینے کا معاملہ سامنے آیا

کانپور میں طلاق کا ایک منفرد معاملہ سامنے آیا ہے ، جس میں ایک خاتون کا کہنا ہے کہ اس کے شوہر نے اسے سپیڈ پوسٹ بھیج کر تین طلاق دیا ہے۔

Apr 06, 2017 10:29 PM IST | Updated on: Apr 06, 2017 10:29 PM IST

کانپور (سنديپ سویتا ) کانپور میں طلاق کا ایک منفرد معاملہ سامنے آیا ہے ، جس میں ایک خاتون کا کہنا ہے کہ اس کے شوہر نے اسے سپیڈ پوسٹ بھیج کر تین طلاق دیا ہے۔کانپور کی رہنے والی عالیہ صدیقی اپنا کاروبار کرتی ہیں۔ ان کا نکاح 23 نومبر 2016 کو اس وقت کے بجنور شہر کے اسسٹنٹ لیبر کمشنر کے عہدہ پر تعینات ناصر خان کے ساتھ ہوا تھا۔ عالیہ کا الزام ہے کی شادی سے پہلے اور شادی والے دن ناصر اور اس کے خاندان نے جہیز کا مطالبہ کیا ، لیکن انہیں کسی طرح سے شادی میں رکاوٹ نہ ڈالنے کے لئے راضی کر لیا۔ اس کے بعد اسی دن شام کو اس کی رخصتی بھی ہوگئی اور عالیہ اپنے شوہر اور سسرال والوں کے ساتھ شوہر کے آبائی گاؤں چھبرامؤ کے لیے روانہ ہو گئی ۔

عالیہ کے مطابق راستے میں سب لوگ کانپور کے ہوٹل لینڈ مارک میں ٹھہرے ، جہاں سیفٹی کے نام پر ان کی ساس نے تمام زیورات لے لیے اور ناصر کو عالیہ کے ساتھ ہوٹل میں رکنے کیلئے کہہ کر چھبرامؤ چلے گئے۔عالیہ کے مطابق جب 24 نومبر کو وہ ناصر کے ساتھ اپنی سسرال پہنچی تو اس کو پتہ چلا کہ ناصر پہلے سے شادی شدہ ہے ۔ جب عالیہ نے ناصر سے اس بارے میں پوچھا ، تو اس نے کہا کہ وہ پہلی بیوی کو طلاق دے چکا ہے۔ لیکن جب عالیہ نے اس کی مخالفت کی تو اس کو سسرال سے باہر نکال دیا گیا۔

کانپور : اب اسپیڈ پوسٹ کے ذریعہ تین طلاق دینے کا معاملہ سامنے آیا

مائیکے واپس آنے کے بعد عالیہ پریشان رہنے لگی ، لیکن خاندان والوں کے سمجھانے کے بعد جنوری 2017 میں وہ دوبارہ سسرال گئی ، مگر اس کو گھر میں داخل نہیں ہونے دیا گیا اور پیسے کا مطالبہ کیا گیا ۔عالیہ کے مطابق جب اس نے معلوم کیا تو پتہ چلا کی ناصر کی پہلی بیوی اب بھی قانونی طور پراس کی بیوی ہے اور اس نے ناصر پر مقدمہ بھی کر رکھا ہے ، جس کے بعد عالیہ دوبارہ مائیکے واپس آ گئی اور 30 ​​جنوری کو اس کو ایک اسپیڈ پوسٹ ملا ، جس میں تین طلاق کے کاغذات تھے ۔

اس میں سے پہلا طلاق 23 نومبرکی شام کو دکھایا گیا تھا ، جس دن عالیہ اور ناصر کی شادی ہی تھی ۔ عالیہ نے اس طرح کے طلاق کی مخالفت کرتے ہوئے اس وقت وزیر محنت ، وزیر اعلی اور گورنر کو خط لکھا ، لیکن کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز