طلاق ثلاثہ معاملہ: خاتون نے سسرال پہنچ کر کیا ہنگامہ، پولس نے دلایا کاروائی کا بھروسہ

Apr 13, 2017 12:42 PM IST | Updated on: Apr 13, 2017 12:42 PM IST

علی گڑھ ۔ مرکزی اور یو پی کی نئی سرکار نے جب سے ان مسلم خواتین کو جو طلاق ثلاثہ  سے متاثر ہیں، انصاف دلانے کا یقین دلایا ہے ، ایسی خواتین اپنے شوہر اور سسرال والوں سے حق اور انصاف کی لڑائی لڑنے کے لیے کمر بستہ ہو چکی ہیں۔ ایسی ہی ایک خاتون نے بلند شہر سے علیگڑھ آکر اپنی پانچ سالہ بچی کے ساتھ اپنے سسرال میں زبردست ہنگامہ کیا۔ملک میں چل رہی طلاق ثلاثہ کی بحث کے درمیان علی گڑھ شہر کے جمال پور میں ایک گھریلو جھگڑے میں خاتون کو اسکے شوہر کے ذریعہ گھر سے باہر نکال کر طلاق دینے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ آج متاثرہ خاتون نے سسرال کے باہر دروازے پر گھنٹوں دستک دی لیکن کسی نے دروازہ نہیں کھولا ۔ معاملہ زیادہ بڑھا تو محلہ میں لوگوں کا ہجوم لگ گیا۔ ہنگامہ کی اطلاع پر پولیس بھی پہنچ گئی۔ بتایا جارہا ہے کہ شوہر گھر سے فرار ہے۔

 متاثرہ عورت نے اپنے مائکے والوں کے ساتھ سسرال میں جم کر ہنگامہ کرتے ہوئے لاکھوں روپیہ کا مطالبہ کئے جانے کا بھی سسرال والوں پر الزام عائد کیا ہے ۔اترپردیش کے ضلع بلند شہر کی رہنے والی ریحانہ کا نکاح 2012 میں علی گڑھ کی تحصیل میں بطور کاتب کام کرنے والے شریف سے ہوا تھا ۔ اب ریحانہ کا الزام ہے کہ مسلسل جہیز کا مطالبہ کررہے شوہر نے کچھ ماہ قبل طلاق طلاق طلاق کہہ کراسے گھر سے نکال دیا تھا، تب سے ہی وہ اپنے مائکے والوں کے ساتھ رہ رہی ہے ۔ وہ گذشتہ کئی دن سے اپنی پانچ سالہ بچی کو لیکر بلند شہر سےعلی گڑھ  آکر سسرال والوں سے بات کرنا چاہ رہی ہے لیکن کوئی اس سے ملنے کو بھی تیار نہیں ہے ۔ دروازہ تک نہیں کھولا گیا ۔ محلہ میں ہنگامہ ہونے پر بھیڑ جمع ہونے کی اطلاع پر پہنچی پولس نے کاروائی کا بھروسہ دلاکر ہنگامہ کو ختم کروایا۔

طلاق ثلاثہ معاملہ: خاتون نے سسرال پہنچ کر کیا ہنگامہ، پولس نے دلایا کاروائی کا بھروسہ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز